انگلینڈ میں پاکستانی ریکارڈز سے بھارت پر گھبراہٹ طاری

82

مبئی(وائس آف ایشیا)سابق بھارتی کپتان سارو گنگولی نے انگلینڈ میں ریکارڈ اور آئی سی سی ٹورنامنٹ میں کارکردگی کو دیکھتے ہوئے پاکستان کو فیورٹ ٹیموں میں ایک ٹیم قرار دیا ہے۔ بھارتی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے سارو گنگولی کا کہنا تھا کہ عالمی ٹورنامنٹس اور انگلینڈ میں پاکستان ٹیم کا ریکارڈ غیرمعمولی ہے، دوسال قبل انہوں نے چیمپئنز ٹرافی جیتی، انگلینڈ میں 2009ء میں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ جیتا۔حالیہ سیریز کے دوران انگلینڈ کے خلاف دوسرے ون ڈے میں پاکستان کی کارکردگی کی مثال دیتے ہوئے گنگولی نے کہا کہ پاکستان نے انگلینڈ میں ہمیشہ اچھا کھیلا ہے، وہ صرف 12رنز سے پیچھے رہ گئے نہیں تو انہوں نے 374رنز کا پہاڑ جیسا ہدف تقریباً حاصل کرلیا تھا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اپنی عمدہ بولنگ کی وجہ سے انگلینڈ کو اس کی سرزمین پر ٹیسٹ میچز میں بھی شکست دی ہے۔گنگولی کا کہنا ہے کہ ویرات کوہلی اور ان کی ٹیم کواس خطرے سے بہت زیادہ پریشان ہونے کی ضرورت نہیں، بھارتی سکواڈ میں گہرائی ہے اور اسے ہرانا بہت مشکل ہے۔ سابق بھارتی کپتان نے کہا کہ میں ریکارڈز پر یقین نہیں رکھتا، دونوں ٹیموں کو اس خاص دن اچھا کھیلنا ہوگا، بھارت اچھی ٹیم ہے، ایسی ٹیم جس میں کوہلی، روہیت شرمااور شیکھر دھون جیسے کھلاڑی ہوں، اسے شکست دینا مشکل ہوگا۔ورلڈ کپ 2003 ء کے فائنل میں آسٹریلیا سے شکست کھانے والی بھارتی ٹیم کا آج کی ٹیم کے ساتھ موازنہ کرنے کے سوال پر گنگولی نے کہا کہ دونوں ٹیمیں مختلف جنریشن کی ہیں، ہم نے 2003 ء میں فائنل کھیلا، مجھے امید ہے یہ فائنل کھیلیں گے اور جیتیں گے۔