سرپرائز پیکج محمد حسنین اپنی رفتار سے بیٹسمینوں کو پریشان کرنے کیلئے تیار

109

کراچی(اسٹاف رپورٹر )سرپرائز پیکج محمد حسنین کی آنکھوں میں ورلڈ کپ کا خواب جھلملانے لگا۔4 سال قبل آسٹریلیا کے سابق کپتان اسٹیووا نے محمد حسنین کو بولنگ کرتے ہوئے دیکھ کر کہا تھا کہ وہ ایک روز انٹرنیشنل کرکٹ میں اپنا مقام بنائیں گے۔19 سالہ حسنین نے تیز رفتار بولنگ کی بدولت برق رفتاری سے پاکستانی ورلڈ کپ ا سکواڈ میں جگہ بناکر سٹیووا کی پیشگوئی کو درست ثابت کردیا ہے۔چیف سلیکٹر انضمام الحق انھیں سرپرائز پیکج قرار دیتے ہیں۔محمد حسنین نے پی ایس ایل میں صلاحیتوں کے عمدہ جوہر دکھائے اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو چیمپئن بنوانے کے ایک ہفتے میں وہ پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل کرچکے تھے۔ انٹر ویومیں حسنین نے کہا کہ پاکستان کی نمائندگی اور ورلڈ کپ سکواڈ میں شمولیت میرے لیے دہری خوشی کا باعث ہے، میں اپنی سپیڈ سے بیٹسمینوں کو پریشان کرنے کیلئے تیار ہوں، میں تیز رفتاری سے بولنگ کرنا پسند کرتا ہوں اور یہی میرا سب سے مضبوط پوائنٹ ہے۔انھوں نے مزید کہاکہ میں جانتا ہوں کہ انگلینڈ سے سیریز میرے لیے بہت بڑا موقع اور اس کے بعد میگا ایونٹ شیڈول ہے، میں اپنا نام اور مقام بنانے کی پوری کوشش کروں گا۔حسنین کے سابق کرکٹ کوچ اقبال امام بھی ان کی صلاحیتوں کے معترف ہیں۔
،انھوں نے کہا کہ 2015 میں انڈر 15 ٹیم کے دورہ آسٹریلیا کے موقع پر سٹیووا سڈنی میں اپنے بیٹے آسٹن کی پرفارمنس دیکھنے آئے، جہاں پر انھوں نے شاہین آفریدی اور حسنین کو بولنگ کرتے دیکھا اور ان کے کھیل میں آگے جانیکی پیشنگوئی کی، اب دونوں ہی قومی ٹیم کا حصہ ہیں۔