سی آئی ایس اسلامک بینکنگ و فنانس ایوارڈ کا اعزاز

48

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان پاورٹی ایلیوئیشن فنڈ (پی پی اے ایف) نے ازبکستان کے دارالحکومت تاشقند میں منعقدہ تقریب میں اسلامک فنانس انڈسٹری میں بہترین کارکردگی پر سی آئی ایس اسلامک بینکنگ و فنانس ایوارڈ جیت لیا ہے۔ پی پی اے ایف نے یہ ایوارڈ پاکستان بھر میں بلاسود قرضوںکے پروگرام پر کامیابی سے عمل درآمد کرنے پر حاصل کیا ہے۔ سی آئی ایس اسلامک بینکنگ اینڈ فنانس ایوارڈز الہدی سی آئی بی ای کا غیرمعمولی اعزاز ہے جس کا مقصد اسلامک مائیکروفنانس انڈسٹری کے تصور کو فروغ دینا اور شاندار کارکردگی کے حامل رہنماؤں کی حوصلہ افزائی ہے۔ یہ ایوارڈز بین الاقوامی مائیکروفنانس اداروں، تکافل و لیزنگ کمپنیوں، بینکوں اور اسلامک مائیکروفنانس کے شعبے میں غیرمعمولی خدمات پیش کرنے والے افراد کو 15 مختلف کٹیگریوں میں پیش کیا گیا۔ پاکستانی سفیر ڈاکٹر عرفان یوسف شامی نے کہا کہ اسلامک بینکنگ و فنانس سے غیرملکی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوگا، عالمی سطح پر رابطے بڑھیں گے، نئی ملازمتیں پیدا ہوں گی، سماجی و معاشی ترقی آئے گی اور غربت کا خاتمہ ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ انہوں نے بطور پاکستانی سفیر اسلامک فنانس کو فروغ دینے کے لئے ہر سطح پر فعال کردار ادا کیا ہے جس سے مقامی افراد کی زندگیوں میں آسانی کی راہ ہموار ہورہی ہے اور وہ دنیا میں مثبت تبدیلی لا رہے ہیں۔ پی پی اے ایف کے جنرل منیجر فرید صابر نے یہ ایوارڈ وصول کیا۔ اس موقع پر انہوں نے بتایا کہ پی پی اے ایف اپریل 2019 تک 5 لاکھ 24 ہزار سے زائد مستحق افراد کو بلاسود قرضے فراہم کرچکا ہے۔ ان میں سے 67 فیصد خواتین ہیں اور ملک بھر میں 26 شراکتی تنظیموں کے ذریعے 45 اضلاع کی 442 یونین کونسلوں میں 12.9 ارب روپے تقسیم کرچکا ہے ۔ بلاسود قرضہ کی اوسط رقم 24 ہزار 596 روپے ہے اور قرضوں کی واپسی کی شرح 95 فیصد سے زائد ہے۔ اس پروگرام سے براہ راست 5 لاکھ سے زائد افراد مستفید ہوئے جبکہ 30 لاکھ افراد بلواسطہ مستفید ہوئے۔
انہوں نے غربت کے خاتمہ اور مالیاتی خدمات کی فراہمی کے لئے بلاسود قرضے کے پروگرام کو اہم قرار دیا ، یہ پروگرام غربت سے انتہائی متاثرہ افراد کو اپنے پائوں پر کھڑا کرنے کے لئے پی پی اے ایف کی جامع اور پائیدار حکمت عملی سے ہم آہنگ ہے۔ اس تقریب میں اسلامک بینکنگ و فنانس، اسلامک انشورنس، اور بینکنگ انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے نمایاں اداروں کے ماہرین نے شرکت کی۔ دولت مشترکہ کی خود مختار ریاستیں (سی آئی ایس) ایک علاقائی بین الحکومتی تنظیم ہے جس میں قازقستان، ازبکستان، تاجکستان، کرغزستان، ترکمانستان، آذربائیجان، روس، آرمینیا، بیلاروس، مولدوا اور یوکرائن سمیت 11 ممالک شامل ہیں۔ اس فورم کا مقصد سی آئی ایس ممالک میں اسلامک بینکنگ و فنانس کی انڈسٹری کو فروغ، مستحکم اور متحد کرنا ہے۔ اس فورم میں سی آئی ایس ممالک میں مالیاتی خدمات، فنانشل ٹیکنالوجی، تکافل، سکوک ، اسلامک کیپٹل مارکیٹس، اسلامک مائیکروفنانس کے پھیلائو کے مواقع پر بھی اظہار خیال کیا گیا۔ اس فورم کا انعقاد الہدی سینٹر آف اسلامک بینکنگ اینڈ اکنامکس (متحدہ عرب امارات) نے اسلامک کارپوریشن فار ڈیولپمنٹ آف پرائیویٹ سیکٹر (آئی سی ڈی)، اسلامک ڈیولپمنٹ بینک (آئی ز ڈی بی) اور ازبکستان بینک ایسوسی ایشن کے اشتراک سے کیا گیا ۔