سمجھوتاایکسپریس کے متاثرین کا پارلیمنٹ ہائوس کے سامنے مظاہرہ

43

اسلام آباد(آن لائن ) سمجھوتا ایکسپریس کے متاثرین نے جمعرات کے روز پارلیمنٹ ہائوس کے سامنے احتجاجی مظاہر ہ کیا اور بھارت مخالف نعرے بازی کی گئی اور انصاف کا مطالبہ کیا گیا جبکہ متاثرین نے سینیٹر رحمان ملک کو بطور چیئرمین قائمہ کمیٹی داخلہ پٹیشن جمع کرائی ہے جس پر سینیٹر رحمان ملک نے سانحہ سمجھوتا ایکسپریس کیس کو قائمہ کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں لینے کا فیصلہ کیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق سمجھوتا ایکسپریس کے متاثرین جمعرات کے روز پارلیمنٹ ہائوس کے سامنے جمع ہوئے ، مظاہرین میں خواتین و بچے بھی شامل تھے ۔مظاہرے کی قیادت بشارت کھوکھر کررہے تھے، جڑواں شہروں کے 40سے زاید مسیحی برادری کے لوگ بھارت کیخلاف سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں ۔متاثرین کا کہنا تھا کہ سانحہ کے ملزمان کو بھارت نے کیوں رہا کیا؟ نریندرمودی مسلمانوں کا قاتل ہے،سانحہ کو12 سال گزر جانے کے باوجود عالمی دنیا کی خاموشی سمجھ سے بالا تر ہے۔ دریں اثناء سانحہ سمجھوتا ایکسپریس کے متاثرین نے سینیٹر رحمان ملک کو بطور چئیرمین قائمہ کمیٹی داخلہ پٹیشن جمع کرائی جس پر سینیٹر رحمان ملک نے سانحہ سمجھوتاایکسپریس کیس کو قائمہ کمیٹی کے آئندہ جلاس میں لینے کا فیصلہ کیا ہے ،سینیٹر رحمان ملک کا کہنا تھا کہ سانحہ سمجھوتاکیس پر قائمہ کمیٹی برائے داخلہ ایک اسپیشل اجلاس بلائیگی۔