شہبازشریف کے وکیل عدالت عظمیٰ میں بے ہوش ہوکر گر پڑے

32

اسلام آباد (نمائندہ جسارت) سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کے وکیل اشتر اوصاف کیس کی سماعت کے دوران عدالت عظمیٰ میں بے ہوش ہوکر گر پڑے۔ عدالت عظمیٰ میں سابق وزیراعلیٰ شہبازشریف کی ضمانت منسوخی کے کیس کی سماعت جاری تھی کہ اس دوران دلائل دیتے ہوئے ان کے وکیل اشتر اوصاف بے ہوش ہوکر گر پڑے۔ اشتر اوصاف کی طبیعت بگڑنے پر مقدمات کی سماعت ملتوی کردی گئی اور انہیں فوری طبی امداد دینے کے لیے عدالت عظمیٰڈسپنسری کے ڈاکٹر کو طلب کیا گیا، عدالت عظمیٰ کے ڈاکٹر یاسر نے اشتر اوصاف کا معائنہ کیا جس کے بعد انہیں ایمبولینس کے ذریعے قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا،اشتر اوصاف کی طبیعت بگڑے پر کیس کی سماعت کرنے والے جسٹس عظمت سعید نے ان کی طبیعت کے بارے میں معلوم کیا اور کورٹ نمبر 2 کے تمام کیسز ملتوی کردیے۔ کورٹ نمبر 2 میں کیسز ملتوی ہونے کے بعد وزیر ریلوے شیخ رشید کے خلاف توہین عدالت کیس بھی ملتوی کردیا گیا۔ اشتر اوصاف سابق وزیراعظم نوازشریف کے دورِ حکومت میں اٹارنی جنرل پاکستان تھے اور انہوں نے گزشتہ سال اپنے عہدے سے استعفا دیا تھا۔