مشیر خزانہ کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس

112
اسلام آباد: وفاقی مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کررہے ہیں
اسلام آباد: وفاقی مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کررہے ہیں

اسلام آباد(اے پی پی) وفاقی کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے کراچی میں بجلی کی قلت پرقابو پانے کے لیے قومی گرڈ سے کے الیکٹرک کو 150 میگاواٹ اضافی بجلی کی فراہمی ، سابق فاٹا کے 7قبائلی اضلاع کو رمضان المبارک میں اضافی بجلی کی فراہمی کے لیے ٹیسکو کو 1.8 ارب روپے کی زرتلافی فراہم کرنے اور مالی سال 2018-19 ء کے لیے 158.5 ارب روپے مالیت کی 5.15 ملین ٹن گندم کی خریداری کی تجویز کی منظوری دیدی ہے۔کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس بدھ کو وزیراعظم کے مشیربرائے خزانہ، محصولات واقتصادی امور ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ کی زیرصدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں مختلف ڈویژنوں کی جانب سے تجاویز اور سفارشات پر بحث ومباحثہ ہوا۔ پاور ڈویژن کی جانب سے کمیٹی کو بتایا گیا کہ سابق قبائلی ایجنسیوں میں گھریلو صارفین کے بجلی بلوں کی ادائیگی کے لیے حکومت ہرماہ 1.3 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کررہی ہے۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے سعودی فنڈ برائے ترقی گرانٹ کے تحت مختلف منصوبوں کی تعمیر پر ٹیکس کی چھوٹ دینے سے متعلق تعمیرنووبحالی اتھارٹی کی تجویز منظور کر لی۔ سیکرٹری نیشنل فوڈ سیکورٹی وریسرچ نے کمیٹی کو ملک میں گندم کے موجودہ اسٹاک کے حوالے سے بریفنگ دی۔ انہوں نے اجلاس کوبتایا کہ پنجاب میں گندم کی خریداری کا کام صوبائی حکومت اور پاسکو کی نگرانی میں احسن انداز میں جاری ہے۔وزارت سمندی امورکی تجویز پر اقتصادی رابطہ کمیٹی نے غیرمنافع بخش فلاحی اداروں کی جانب سے ضرورت مندوں اورمستحقین کے لیے کام کرنے والے اداروں کے لیے چاول کے کنسائنمنٹس کو اسٹوریج اخراجات سے مستثنا قرار دینے کی تجویز کی منظوری بھی دی۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے مختلف وزارتوں اورڈویژنز کے لیے تکنیکی ضمنی اور ضمنی گرانٹس کی منظوری بھی دی۔ علاوہ ازیں مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ پاکستان اور برطانیہ کے درمیان تجارتی اور اقتصادی شعبوں میں تعاون کوبڑھانے کی ضرورت ہے ۔یہ بات انہوں نے پاکستان میں تعینات برطانوی ہائی کمشنر تھامس ڈریو سے گفتگوکرتے ہوئے کہی جنہوں نے بدھ کو وزارت خزانہ میں ان سے ملاقات کی۔