جائداد کی ملکیت کسی اور کے نام رکھنا بے نامی ہے، چیئرمین ایف بی آر

45

اسلام آباد (صباح نیوز/ آن لائن) چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو شبر زیدی نے کہا ہے کہ گھر کی ملکیت کسی اور کے نام رکھنا بے نامی ہے، بے نامی اثاثے رکھنے پر 5 سال قید ہو سکتی ہے، ہمارے چیلنجز میں ٹیکس اکٹھا کرنا اور کرنٹ اکائونٹ خسارہ کم کرنے کیلیے درآمدات کو کم کرنا شامل ہے، ہمارا مقصد ٹیکس نظام کو درست کرنا ہے اور کسی کو تنگ کرنا نہیں ہے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ اثاثے ڈکلیئریشن ایمنسٹی سے زیادہ بڑی اسکیم ہے۔ شبر زیدی کا کہنا تھا کہ 300 ٹیکس دہندگان پاکستان کا 80 فیصد ٹیکس دیتے ہیں جبکہ تنخواہ دار پاکستان کا 5 سے 6 فیصد ٹیکس دیتے ہیں۔ ہم نے ٹیکس وصولی 5 ہزار ارب روپے تک کرنے کا منصوبہ بنایا ہے اور 4 ہزار 100 ارب ٹیکس وصولی متوقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں ایف بی آر میں سب کو ساتھ لے کر چلوں گا۔