ماہ رمضان میں مضر صحت اشیا فروخت کی جارہی ہیں، فاروق مشتاق

23

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) حیدر آباد کے سماجی رہنما سید فاروق مشتاق کا کہنا ہے کہ ماہ رمضان المبارک میں جہاں ایک جانب بازاروں اور مارکیٹوں میں ہوشربا مہنگائی کے ریکارڈ ٹوٹ گئے ہیں وہیں افطار سے قبل گاہکوں کی بڑی تعداد کی موجودگی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے گلے سڑے پھل ، سبزیاں اور غیر معیاری آئل میں تیار کردہ پکوڑے ، سموسے اور کچوریاں فروخت کی جارہی ہیں ۔ جو مختلف بیماریوں کا سبب بن رہی ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ پرائس کنٹرول کمیٹیاں محض نمائشی کارروائیاں بازاروں اور مارکیٹوں میں کررہی ہیں ۔ معمولی ٹھیلے اور دکان والوں کے خلاف کارروائی کرکے خانہ پری کی جارہی ہے ۔ جس کی وجہ سے مہنگائی کم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے ، ساتھ ہی یہ دکاندار اور ٹھیلے والے ایسے پھل اور سبزیاں فروخت کررہے ہیں جنہیں عام دنوں میں سبزی منڈی میں کچرے کے ڈھیر پر پھینک دیا جاتا ہے لیکن مارکیٹوں میں مہنگائی اور گاہکوں کی زیادہ آمد کا فائدہ اٹھاتے ہوئے یہ گلے سڑے پھل اور سبزیاں کھلے عام فروخت کی جارہی ہیں ۔ اسی طرح جگہ جگہ لگے سموسے اور پکوڑے کے ٹھیلوں پر ان اشیا کی تیاری میں غیر معیاری آئل استعمال کیا جارہا ہے، اس کے استعمال سے روزہ دار اور ان کے بچے پیٹ کے مختلف امراض کا شکار ہورہے ہیں۔ انہوں نے ضلع انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اعلیٰ افسران سے مطالبہ کیا ہے کہ مارکیٹ ، بازاروں اور گلی کوچو ں میں مضر صحت آئل سے تیار کردہ سموسے پکوڑے ، پھل اور سبزی فروخت کرنیوالوں کے خلاف بھرپور کارروائی کرکے انسانی جانوں کو محفوظ کیا جائے ۔