روہڑی اور سکھر ریلوے کالونی میں کنڈا سسٹم کیخلاف کارروائی، 300 کنکشن منقطع

51

 

سکھر (نمائندہ جسارت) پاکستان ریلوے سکھر کے ڈویژنل اسسٹنٹ الیکٹریکل انجینئر محمد ارسلان لاشای کی قیادت میں روہڑی اور سکھر کی ریلوے کالونیوں میں کنڈا سسٹم کے خلاف آپریشن، 300 سے زائد غیر قانونی کنکشن منقطع، ریلوے کالونیوں میں غیر قانونی کنکشنز برداشت نہیں کریں گے۔ ریلوے ملازمین کو بجلی سمیت دیگر سہولیات کی فراہمی اولین ترجیح ہے۔ پاکستان ریلوے سکھر کے ڈویژنل اسسٹنٹ الیکٹریکل انجینئر محمد ارسلان لاشای، ڈی ای ایف او پاور منیر احمد لاشاری کی ہدایات پر اے ای ایف اور وہڑی غلام عباس نے عملے کے ہمراہ روہڑی کی مختلف ریلوے کالونیوں لوکو شیڈ، آئی ڈبلیو ٹکری، نیو یارڈ کالونی، گارڈ لائن، سکھر میں اے ای ایف او عبدالعزیز نے نیو پنڈ، گڈانی پھاٹک، ریتی لائن، سلیپر فیکٹری، فریکل ایسٹ وسیٹ، بندر کالونی، جے ایچ کیو کالونی سمیت دیگر علاقوں میں آپریشن کرکے 300 سے زائد غیر قانونی کنڈا کنکشن کاٹ کر تاریں تحویل میں لے لیں۔ اس موقع پر ڈویژنل اسسٹنٹ الیکٹریکل انجینئر محمد ارسلان لاشاری نے بتایا کہ ریلوے کالونیوں میں بجلی کی چوری میں غیر قانونی طور پر رہائش پذیر قابضین ملوث ہیں جو ریلوے کی بجلی چوری کرتے ہیں جس کے باعث بجلی کی فراہمی متاثر ہونے سے ریلوے ملازمین کو پینے کے پانی سمیت دیگر مشکلات کا سامنا رہتا ہے۔ سکھر ڈویژن کا چارج لیے ابھی ایک سے ڈیڑھ ہفتہ ہی ہوا ہے، مجھے لوکو شیڈ سے بجلی کی مسلسل لوڈشیڈنگ پانی کی عدم فراہمی کی شکایات ملی، جس پر سکھر اور روہڑی کی ریلوے کالونیوں میں آپریشن کرکے تین سو سے زائد کنکشن منقطع کرکے تاریں تحویل میں لے لی ہیں۔ عملے کو بھی ہدایات دی ہیں کہ وہ ریلوے کالونیوں میں بجلی چوری کی فوری اطلاع افسران کو دیں تاکہ بجلی چوروں کیخلاف موثر کارروائی عمل میں لائی جاسکے اور ریلوے ملازمین کو بجلی سمیت دیگر سہولیات فراہم کی جاسکیں۔