بلدیہ غربی میں صفائی کی ٹھیکیدار چینی کمپنی کچرا اٹھانے میں ناکام

49

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کی جانب سے بلدیہ غربی میں صفائی ستھرائی اور کچرا اٹھانے کا ٹھیکا جس چینی فرم کو دیا گیا تھا وہ فرم صفائی ستھرائی اور کچرا اٹھانے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے۔ ان خیالات کا اظہار وائس چیئرمین بلدیہ غربی عزیز اللہ آفریدی نے بلدیہ غربی کے مرکزی دفترمیںمنعقدہ پریس کانفرنس میں کیا ۔پریس کانفرنس میں اراکین ڈسٹرکٹ کونسل اور پرنٹ و الیکٹرونک میڈیا کے نمائندے شریک تھے۔ وائس چیئرمین نے میڈیا کے نمائندوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ بلدیہ غربی میں صفائی ستھرائی اور کچرے کی صورتحال تشویشناک حد تک خراب ہوچکی ہے، منیجنگ ڈائریکٹر سالڈ ویسٹ کو متعدد مرتبہ صورتحال سے آگاہ کرنے کے باوجود ہماری گزارشات پر کوئی توجہ نہیں گئی جس کے باعث پورا ضلع گندگی کا ڈھیر بن چکا ہے جس کی بدبو اور تعفن کی وجہ سے عوام کا جینا حرام ہوچکا ہے ۔ عوام یوسی چیئرمینوں اور وائس چیئرمینوں سے صفائی ستھرائی اور کچرے کی منتقلی مطالبہ کرتے ہیں اور مطالبات پورا نہ ہونے پر وہ عوام کے غم غصہ کا شکار ہوتے ہیں۔وائس چیئرمین نے کہا کہ پریس کانفرنس کا مقصد میڈیا کے ذریعے بلدیہ غربی میں صفائی ستھرائی اور کچرے کی صورتحال کو اجاگر کرنا اور حکومت سندھ تک چند گزارشات پہنچانا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہماری سندھ حکومت سے گزارش ہے کہ سالڈ ویسٹ کو فراہم کیا جانے والے فنڈ DMC(W) کو فراہم کیا جائے، منتخب بلدیاتی نمائندے بہت بہتر انداز میں صفائی ستھرائی کی ذمہ داری سر انجام دیں گے ،بلدیہ غربی کی گاڑیاں جس حالت میں لی گئی تھیں ضروری مرمت کرواکر واپس کی جائیں،حکومت سندھ 100 گاڑیاں بشمول لوڈر ٹریکٹر فراہم کرے،خاکروبوں اور قلیوں کی ریٹائر منٹ اور انتقال کی وجہ سے خالی ہونے والی اسامیوں پر تقرر کی اجازت دی جائے ،فوری طور پرکنٹریکٹ بنیادوں پر خاکروبوں کی تعیناتی کی اجازت دی جائے، سندھ سالڈویسٹ نے 14 ماہ کے دوران صرف 40 فیصد کچرا اٹھایا ہے بقیہ60 فیصد کچرے کی منتقلی کے لیے بلدیہ غربی کو خصو صی گرانٹ فراہم کی جائے۔