تجارتی تنازع ٹرمپ کا چینی ہم منصب سے ملاقات کا اعلان

25

واشنگٹن (انٹرنیشنل ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا ہے کہ وہ آیندہ ماہ اپنے چینی ہم منصب ژی جن پنگ سے ملاقات کریں گے۔امریکی صدر نے اس ملاقات کا اعلان ایسے وقت کیا ہے جب دنیا کی دو نوں بڑی معیشتوں کے درمیان جاری تجارتی جنگ شدت اختیار کرگئی ہے۔پیر کے روز وائٹ ہاؤس میں گفتگو کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ وہ دنیا کی 20 بڑی معاشی طاقتوں کی نمایندہ تنظیم جی 20 کے آیندہ ماہ جاپان میں ہونے والے سربراہ اجلاس کے موقع پر چینی صدر نے ملاقات کریں گے۔ صدر نے امید ظاہر کی کہ ان کی یہ ملاقات بہت نتیجہ خیز ثابت ہوگی جس میں ان کے بقول امکان ہے کہ کچھ نہ کچھ ضرور ہوگا۔بعدٹرمپ نے کہا کہ آیندہ 3 سے 4 ہفتوں میں یہ واضح ہوجائے گا کہ تجارتی تنازعات پر گفتگو کے لیے امریکا کا جو وفد 2 ہفتے قبل بیجنگ گیا تھا، اس کا دورہ کامیاب رہا تھا یا نہیں۔ صدر کا کہنا تھا کہ انہیں لگتا ہے کہ یہ دورہ بہت کامیاب رہا تھا۔ امریکی صدر نے یہ بیان ایسے وقت دیا ہے جب چین نے بھی ایل این جی اور فروزن سبزیوں سمیت 5 ہزار سے زائد امریکی درآمدات پر بھاری ٹیکس عائد کردیا ہے۔ چینی حکومت کے مطابق اس نے یہ اقدام امریکا کی جانب سے 200 ارب ڈالر کی چینی برآمدات پر نئے ٹیکسوں کے نفاذ کے ردِ عمل میں کیا ہے۔ اس سے قبل امریکا نے گزشتہ ہفتے 200 ارب ڈالر مالیت کی چینی درآمدات پر عائد 10 فیصد ٹیکس بڑھا کر 25 فیصد کردیا تھا۔ امریکی حکام نے کہا ہے کہ وہ مزید 300 ارب ڈالر مالیت کی چینی درآمدات پر بھی ٹیکس عائد کرنے پر غور کر رہے ہیں۔ دوسری جانب چین کے وزیر خارجہ وانگ یی نے کہا ہے کہ امریکی اور چینی مذاکرات کار اختلافی تجارتی معاملات کے لیے کوئی مناسب حل تلاش کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ روسی دارالحکومت ماسکو میں دیے گئے بیان میں چینی وزیر خارجہ نے کہا کہ فریقین مذاکرات میں تعطل کے باوجود پُرامید ہیں کہ بہتر نتائج کا حصول ممکن ہے۔