این ٹی آئی ایس بی کاغیر ملکی ویب سائٹ کو کنٹرول نہ کرنے کا نوٹس

42

کراچی ( رپورٹ : محمد انور ) وفاقی حکومت کے نیشنل ٹیلی کام اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی سیکورٹی بورڈ ( این ٹی آئی ایس بی ) نے ملک سے باہر سے چلنے والی ویب سائٹ کو کنٹرول کرنے کے لیے اپنے فیصلوں پر 5 ماہ بعد بھی عمل درآمد نہ ہونے کا نوٹس لیا ہے اور تمام متعلقہ محکموں کو ہدایت کی ہے کہ جلد سے جلد تمام فیصلوں پر عمل کر کے رپورٹ بورڈ کو پیش کی جائے۔ یادرہے کہ ( این ٹی آئی ایس بی ) نے 27 نومبر 2018ء کو اسلام آباد میں ہونے والے اجلاس میں پاکستان کے باہر سے چلنے والی تمام ویب سائٹس کے ڈومین اور ہوسٹنگ کو پاکستان کے اداروں سے منسلک کرنے کا فیصلہ کیا تھا تاکہ ان ویب سائٹس کو کنٹرول کیا جاسکے۔ یہ فیصلہ ویب سیکورٹی کے تحفظ کے لیے کیا گیا ہے۔ملک میں ویب سائٹس کے ڈومین اور ہوسٹنگ فراہم کرنے والے اداروں میں پی ٹی سی ایل ، این ٹی سی ، کام سیٹ ، سائبرنیٹ نیاٹیل اور دیگر ہیں۔ اس اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا تھا کہ ان ویب سائٹس کی ہوسٹنگ کے امور بیرون ممالک سے پاکستان میں منتقل کرنے کے لیے بھی اقدامات کیے جائیں۔ وفاقی وزارت نے 5 ماہ گزر جانے کے باوجود ( این ٹی آئی ایس بی ) کے فیصلوں پر کوئی پیش رفت نہ کیے جانے کا نوٹس لیا ہے اور ہدایت کی ہے کہ ان فیصلوں پر بلا تاخیر عمل کیا جائے۔ سرکاری ذرائع کا کہنا ہے کہ بورڈ نے اپنے سرکلر میں فیصلوں پر عمل کرنے کے لیے 5 مئی کی تاریخ مقرر کی تھی اس ضمن میں گزشتہ ماہ اپنے سرکلر نمبر ( این ٹی آئی ایس بی ¡¡ ) – 61 /66- 36 کے ذریعے تنبیہ کی گئی تھی کہ 5 مئی تک اجلاس کے فیصلوں کے تحت ویب سائٹس سیکورٹی کے لیے اقدامات مکمل کرلیے جائیں۔ خیال رہے کہ اس وقت پوری دنیا میں ایک ارب 50 کروڑ ویب سائٹس ورلڈ وائڈ ویب ( ڈبلیو ڈبلیو ڈبلیو ) پر موجود ہیں۔ جن میں 20 کروڑ فعال ہے۔ پاکستان میں دلچسپی سے استعمال ہونے والی بیشتر ویب سائٹ بھارت سے چل رہی ہیں جبکہ گوگل کا مرکزی دفتر کیلیفورنیا امریکا میں ہے۔