تحریک آزادی کشمیر سے بیگانگی قومی خودکشی کے مترادف ہوگی‘ فرید پراچہ

62

مکہ مکرمہ (رپورٹ :محمد عامل عثمانی )نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان فرید پراچہ نے کہا ہے کہ تحریک آزادی کشمیر سے بیگانگی قومی خودکشی کے مترادف ہوگی‘ کشمیر کے حوالے سے پارلیمنٹ کے ذریعے متفقہ قومی پالیسی کا اعلان کیا جائے،ہمیں یہ یقین پیدا کرنا ہوگا کہ تحریک آزادی کشمیر سے بیگانگی قومی خودکشی کے مترادف ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے عمرہ ادائیگی کے بعد اپنے اعزاز میں دی گئی افطار پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عالمی سطح پر لابی کا انتظام کیا جائے اور مسئلہ کشمیر کو اقوام عالم کے سامنے اجاگر کرنے اور اقوام متحدہ کے ذریعے حل کرنے کے سلسلے میں ٹھوس اقدامات کیے جائیں۔ انہوں نے پاکستانیوں سے اپیل کی وہ اللہ سے استغفار کرتے ہوئے پاکستان کی سلامتی اور رحمتوں کے لیے دعا کریں۔حرمین شریفین اللہ تعالٰی تبارک اللہ کی بے پناہ رحمتوں اور احسانات اوراس کی طرف سے آنے والے انعامات کا مظہر ہے ۔فرید پراچہ نے یہاں بہتریں انتظامات اور بے مٹال امن قائم کرنے پر خادم الحرمین شریفین اور انکی انتظامیہ کا بھی شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے پاکستان کے حالات پر بات کرتے ہوے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ 6 ارب ڈالر کے پیکیج کے لیے ملک کو ایک طرح سے گروی رکھا گیا ہے اور ملکی سلامتی کو قسطوں میَں فروخت کیا جارہاہے ۔ مہنگائی کی بدترین شکل نافذکی جاچکی ہے اور اس میں مسلسل اضافہ ہی ہورہا ہے ۔فرید احمد پراچہ نے کہا کہ جماعت اسلامی پاکستان کو اسلامی نظام اور کرپشن فری بنانے کی تحریک جاری رکھے گی، اور اس سلسلے میں ہم دیگر جماعتوں سے مل کر آموز رسالت ص اور ختم نبوت کے تحفظ کے سلسلے میں ایک بھرپور تحریک بھی اٹھائیں گے تاکہ پاکستان میں جن باتوں میں پاکستانی قوم کا اتفاق ہے ان کو کوئی بھی آنے والی حکومت یا غیر ملکی ایجنڈا نقصان نا پہنچاسکے۔افطار پارٹی میں ڈاکٹر عرفان اللہ صدیقی ،مجیب الرحمن، قمر رحمان، مولانا منظور حقانی، ذوالفقار ، لیاقت زمان، ثاقب قدیراور دیگر موجود تھے۔