آئی ایم ایف شرائط کیلیے کڑوی گولی نہیں ،زہریلا انجکشن ہے،شاہد رشید

26

اسلام آباد (کامرس ڈیسک) تاجر رہنما شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ اگرملک و قوم کے مفاد میں ہے تو اسکی تفصیلات عام کیوں نہیں کی جا رہی ہیں۔یہ معاہدہ عوام کے لئے کڑوی گولی نہیں بلکہ زہریلی گولی ہے۔ڈالر کی آزادی سے مقامی کرنسی بے وقعت ہو کر ٹشو پیپر بن جائے گی اورملکی معیشت پاش پاش ہو جائے گی۔حکمرانوں کی کرپشن کی سزا عوام کب تک بھگتیں گے ۔حکومت بتائے کہ عوام کب تک نہ گھبرائیں۔شاہد رشید بٹ نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ ملکی معیشت میں بھونچال آ یا ہوا ہے عوام خوفزدہ اور کاروباری برادری مضطرب ہے جبکہ ملک مہنگائی کے سیلاب میں ڈوب رہا ہے۔ روپے کی ریکارڈ پسپائی سے معیشت کا ہر شعبہ بری طرح متاثر ہو ا ہے جبکہ کروڑوں افراد خط غربت سے نیچے دھکیل دئیے گئے ہیں۔انھوں نے کہا کہ معاہدے سے پاکستان کے مالیاتی استحکام کے بارے میں اچھا پیغام جائے گا مگر غریب تباہ ہو جائیں گے۔انھوں نے کہا کہ عوام پر سات ہزار ارب کے ٹیکسوں کا بوجھ انکی کمر توڑ دے گا اور مہنگائی جو پہلے ہی آسمان سے باتیں کررہی ہے مزید بڑھ جائے گی جبکہ بجلی گیس اور تیل کی قیمتوں اور شرح سودمیں اضافہ اسکے علاوہ ہو گا جو قیامت کا منظر پیش کرے گا۔آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ ٹیکسوں کا بوجھ تمام شعبوں پر یکساں لاگو ہو گا تاہم موجودہ حکومت اسکی اہل نہیں ہے۔اس سے پہلے بھی ٹیکس مراعات ختم کرنے اسٹیٹ بنک کو زیادہ سے زیادہ خود مختاری دینے اورضرر رساںسرکاری اداروں کی فروخت کے دعوے کئے گئے ہیں جن پر کبھی عمل نہیں ہوا۔آئی ایم ایف کا قرضہ حکومت کا امتحان ہے جس میں ناکامی کا آپشن موجود نہیں ہے۔