وفاقی حکومت نے ایس ایم ایز کے فروغ کے لیے نئی پالیسی تشکیل دے دی

41

کراچی (اسٹاف رپورٹر)وفاقی حکومت نے چھوٹی اور درمیانی صنعتوں(ایس ایم ایز) کے فروغ کیلئے ایک نئی پالیسی تشکیل دے دی ہے جس کااعلان مئی2019 کے آخری ہفتے میں متوقع ہے۔ لیکن قومی صنعتی پالیسی کے بارے میں تاحال حکومت نے کوئی بات نہیں کہی ہے جبکہ صنعتی حلقے نئی قومی صنعتی پالیسی کی ضرور ت شدت سے محسوس کررہے ہیں۔ صنعتکاروں اور صنعتی تجزیہ کاروں کاکہناہے کہ حکومت کے آئی ایم ایف سے کئے گئے بیل آئوٹ معاہدے کے بعد حکومت کی جانب سے نئی قومی صنعتی پالیسی اور روڈ میپ کااعلان ناگزیر ہوگیاہے بصورت دیگر انڈسٹریل سیکٹر میں نئی سرمایہ کاری رک جائے گی۔ تجزیہ کاروں کاکہناہے کہ آئی ایم ایف سے کئے گئے معاہدے کے تحت بجلی اورگیس کے نرخوں میں اضافہ ہونے جارہاہے۔ جبکہ اگلے وفاقی بجٹ میں حکومت 600ارب روپے سے زائد مالیت کے نئے ٹیکسز عائد کرنے جارہے ہیں۔ اس تناظر میں حکومت کو صنعتوں کوتباہی وبربادی سے بچانے اور انہیں ترقی دینے کاروڈ میپ ‘ نئی قومی صنعتی پالیسی کے ساتھ دینا پڑے گا۔
تجزیہ کاروں کاکہناہے کہ آئندہ مہینوں میں قرضوں کی شرح سود اور ڈالر کی قیمت میں اضافہ متوقع ہے جس سے نئی قومی صنعتی پالیسی کی اہمیت مزید بڑھ جائے گی۔