ٹنڈوالٰہیار،ماہ رمضان المبارک میں مہنگائی کا جن قابو میں نہ آسکا

35

ٹنڈوالٰہیار(نمائندہ جسارت)مہنگائی کے جن کو قابو میں رکھنے والے حکومتی اور ضلع انتظامیہ کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے،ٹنڈوالٰہیارمیں ماہ رمضان المبارک کے دوران مہنگائی کا جن قابو میں نہ آسکا، سبزیاں ،فروٹ،برف ،مشروبات کی قیمتوں کو پر لگ گئے،قیمتیں آسمان پر پہنچ گئی،کھانے پینے کی اشیا غریب کی قوت خرید سے باہر،یوٹیلٹی اسٹوروں پر صرف چینی کے علاوہ کچھ بھی دستیاب نہیں،فلور ملز بند،آٹا بھی 40روپے فی کلو فروخت ہونے لگا،شہریوں کا مہنگائی کو قابو میں رکھنے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق ٹنڈوالٰہیار ضلع بھر میں سبزیوں،مشروبات،برف،پھل فروٹ سمیت روز مرہ استعمال کی اشیا کے دام آسمان پر پہنچ گئے جس کی وجہ سے محنت کش مزدور طبقے کی قوت خرید سے باہر ہوگئی ہے جبکہ فلور ملز بند ہونے اورآٹے کا سرکاری ریٹ37روپے فی کلو فروخت کے اعلان کے باوجود آٹا40روپے میں سرعام فروخت ہورہا ہے، پرائس کنٹرول لسٹ پر عمل در آمد نہیں ہے ۔مارکیٹ کمیٹی ، محکمہ پرائس کنٹرول والے بھی ہاتھ پر ہاتھ رکھے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔شہریوں نے وزیر اعلیٰ سندھ ، چیف سیکرٹری سندھ سمیت دیگر ارباب اختیار سے مہنگائی پر قابو پانے کا مطالبہ کیا ہے۔