۔27 اپریل کو لاپتا ہونے والی لڑکی بازیاب،عدالت میں پیش

32

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر) 27اپریل کو لاپتا ہونے والی 14سالہ شاہینہ کلہوڑو کو پولیس نے بازیاب کرکے عدالت میں پیش کردیا عدالت نے لڑکی کا بیان قلمبند کرنے کے بعد والد کے حوالے کردیا 27اپریل کو پولیس پوسٹ نسیم نگر کی حدود سے لاپتا ہونے والی 14 سالہ شاہینہ کلہوڑو کو نسیم نگر پولیس کے سب انسپکٹر زاہد اقبال چانڈیو نے کوٹری ببر اسٹاپ سے بازیاب کرکے سول جج وجوڈیشنل مجسٹریٹ نمبر8کی عدالت میں پیش کیا ۔عدالت نے شاہینہ کلوڑو کا 164کا بیان قلمبند کرنے کے بعد اس کو اس کی خواہش پر والد اعظم کلہوڑو کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی۔ لڑکی نے بیان میں کہاکہ وہ گاڑہ گوٹھ کوٹری کی رہائشی ہے اور گزشتہ تین سالوں سے نسیم نگر فیز3قاسم آباد میں آفتاب عباسی کے گھر پر کام کرتی ہے 27کو آفتاب عباسی کی بیگم نے مجھے برا بھلاکہا جس کی وجہ سے وہ گھر سے ناراض ہو کر اپنی مرضی سے اپنی ممانی نسیم کے پاس کوٹری چلی گئی جب اس کو خبر ملی کہ اس کے والد اعظم کلہوڑو نے اس کے اغواکا مقدمہ درج کرادیا ہے تو پیش ہوگئی مجھے کسی نے اغوا نہیں کیا میں اپنے والد اعظم کلہوڑو کے ساتھ ہی جانا چاہتی ہوں ۔