بھتہ خوروں نے عیدی کے نام پر بھتا وصولی مہم شروع کردی

48

کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی میں بھتا خور مافیا نے عیدی کے نام پربھتا وصولی مہم شروع کردی، شہر قائد میں رمضان المبارک کے دوسرے عشرے سے چاند رات تک اربوں روپے کا دھندہ ہوگا جس میں بلدیاتی ادارے، پولیس، سیاسی مافیاز وغیرہ ملوث ہیں۔ ایک رپورٹ کے مطابق کراچی میں بلدیاتی نمائندوں، اسسٹنٹ کمشنرز اور پولیس کی جانب سے’’ عیدی مہم‘‘ شروع کردی گئی ہے۔ مختلف سڑکوں، شاہراہوں، چوک، مرکزی تجارتی مراکز کی گلیوں میں پتھارے، ٹھیلے لگانے کے لیے ریٹ مقرر کر دیے گئے ہیں سب سے زیادہ مہنگے اضلاع شرقی اور وسطی سامنے آئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق شہر کی اہم مارکیٹوں، چوراہوں، فٹ پاتھ، گرین بیلٹس اور گلیوں کو فروخت کر دیا گیا ہے، رمضان المبارک کا پہلا عشرہ ختم ہوتے ہی شہر میں گورکھ دھندے کا آغاز ہو جائے گا۔ اس دھندے میں بلدیہ عظمیٰ، 6 بلدیہ عالیہ، شہر میں تعینات اسسٹنٹ کمشنرز اور علاقہ پولیس نے اپنے اپنے بھتے کی ٹوکن رقم لے لی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ سب سے زیادہ تجارتی مراکز بلدیہ شرقی میں جن میں طارق روڈ، بہادر آباد، کے ڈی اے مارکیٹ، یونیورسٹی روڈ، گلستان جوہر سمیت دیگر ایسے مقامات شامل ہیں جہاں فٹ پاتھ، گرین بیلٹس، تجارتی مراکز کی گلیاں ہیں سب کو فروخت کر دیا گیا ہے۔ ٹھیے، پتھارے، ٹھیلے کا ریٹ 10 ہزار روپے سے ایک لاکھ روپے تک مقرر کیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ ضلع وسطی کی حیدری مارکیٹ، ناظم آباد، کریم آباد سمیت دیگر مقامات کو رمضان المبارک کی چاند رات تک فروخت کر دیا گیا ہے۔ ضلع کورنگی میں بھی تجاوزات قائم کرنے کے لیے مبینہ طور پر بھاری رشوت وصول کی جاچکی ہے جس میں کورنگی 6، ٹمبر مارکیٹ، لیاقت مارکیٹ، بابر مارکیٹ سمیت دیگر مقامات شامل ہیں۔ ضلع ملیر میں بھی بڑی گلیوں اور محلوں میں بچت بازار قائم کرا دیے گئے ہیں، ضلع جنوبی میں بھی بڑے پیمانے پر تجاوزات قائم کر کے عیدی مہم کی منصوبہ بندی کرلی گئی ہے۔ ضلع غربی میں پسماندہ علاقوں اور دیگر اہم مارکیٹوں میں مبینہ طور پر رشوت کے عوض بچت بازار قائم کیے گئے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ عیدی مہم میں رمضان المبارک کی چاند رات تک شہر میں اربوں روپے کے گورکھ دھندے کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔