سیاست ،حکومت، معیشت،معاشرت اور عدالت کو قرآن کے تابع کیا جائے،حافظ نعیم

65

کراچی(اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ ملک کی سیاست ،حکومت ،معیشت ،معاشرت اور عدالت سمیت زندگی کے ہر شعبے کو قرآنی احکامات کے تابع کرنے کی ضرورت ہے،اللہ کے دین اور اجتماعی نظام کو نافذ کرنے سے برکتیں اور رحمتیں نازل ہوں گی ،دین کا غلبہ اور قرآن کی بالادستی ہمارا مقصد حیات ہونا چاہیے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی علاقہ پاک کالونی و شیر شاہ کے تحت لیبر اسکوائر مسجد قبا میں دعوت افطار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔دعوت افطار سے ناظم علاقہ قاری سرفراز احمد اور معتمد مسعود اختر نے بھی خطاب کیا ،سیکرٹری اطلاعات زاہد عسکری بھی اس موقع پرموجود تھے ۔ پروگرام کے موقع پر تحریک محنت کی جانب سے قرآن و حدیث اور دینی کتب و لٹریچر کا اسٹال بھی لگایا گیا تھا جس سے شرکا نے استفادہ کیا ۔حافظ نعیم الرحمن نے مزید کہا کہ روزے کا مقصد تقویٰ کے حصول جھوٹ اور دورنگی کی زندگی کو ترک کرکے حق و سچ کی زندگی اور رب کی بندگی اختیار کرنا ہے روزے کو صرف ایک رسم و عادت اور بھوک پیاس تک محدود نہیں رکھنا ہے بلکہ اللہ کے حکم اور اس کی پوری روح کے ساتھ رکھنے کی ضرورت ہے اور اسی طرح ہماری زندگیوں میں تبدیلی پیدا ہوگی ۔قرآن کریم کی صرف تلاوت نہیں بلکہ اسے سمجھ کر پڑھنے اور اس پر عمل کرنے کی کوشش کرنی چاہیے ،ہمیں قرآن کی تحریک سے جڑنا چاہیے ،قرآن جس تبدیلی اور نظام کو برپا کرنے کا حکم دیتا ہے ،ہم اسے نافذ کرنے کی جدوجہد کریں ۔ ہم نیکیوں کو پھیلانے اور برائیوں سے روکنے والے بنیں ،رمضان المبارک کی نیک اور بابرکت ساعتوں میں اپنا جائزہ بھی لیں اور اس رمضان کو اپنے گزشتہ سال کے رمضان سے زیادہ بہتر بنانے کی کوشش کریں ۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ موجودہ حکومت سے عوام کو بڑی توقعات تھیں کہ تبدیلی آئے گی مگر آج بھی بیرونی مداخلت اوردوسروں کی مرضی سے فیصلے ہورہے ہیں ، آئی ایم ایف سے قرضے لیے جا رہے ہیں ،عوام پر ٹیکس لگائے جا رہے ہیں ، سودی نظام چل رہا ہے اور اس کو تقویت دینے کی کوشش کی جارہی ہے ۔