اسلام آباد ہائیکورٹ‘گھوٹکی کی نو مسلم بہنوں کے تحفظ سے متعلق فیصلہ محفوظ

46

اسلام آباد (آن لائن )اسلام آباد ہائیکورٹ نے گھوٹکی کی دو نومسلم بہنوں کے تحفظ سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ اقلیتیں بھی اتنی ہی پاکستانی ہے جتنا کوئی اور۔ پارلیمنٹ کو کوئی ڈائریکشن نہیں دے سکتے، پارلیمنٹ کو مضبوط ہوتا دیکھنا چاہتے ہیں۔ دوران سماعت رکن کمیشن آئی اے رحمان نے موقف اپنایا کہ سیکرٹری کمیشن عدالت میں اپنی رپورٹ جمع کرا چکے ہیں۔ اقلیتیں صرف سکھر ہی نہیں بلکہ پورے سندھ میں غیر محفوظ ہیں۔ اس تاثر کو زائل کیا جانا چاہیے کہ اقلیتیں اس ملک میں غیر محفوظ ہیں۔ہماری خواہش تھی کہ وہاں جاکر لوگوں سے ملتے اور ان کی رائے جانتے لیکن ایسا نہیں ہوسکا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کے حکومتی نمائندے رمیش کمار آپ کے بالکل ساتھ کھڑے ہیں۔ چیف جسٹس نے رمیش کمار کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ رمیش کمار صاحب ملک میں آپ کی جماعت کی حکومت ہے۔ رمیش کمار نے جواب دیا کہ یہ عدالت رپورٹ کی روشنی میں ڈائریکشن دے دے۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ یہ عدالت پارلیمنٹ کو کوئی ہدایت نہیں دے سکتی۔ اقلیتیں بھی اتنی ہی پاکستانی ہیں جتنا کوئی اور۔ یہ عدالت پارلیمنٹ کو مضبوط ہوتا دیکھنا چاہتی ہے۔ عدالت نے مقدمے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔