تُرک فوج نے تاریخ کی سب سے بڑی مشقیں شروع کردیں

141
انقرہ: تُرک بحریہ ملکی تاریخ کی سب سے بڑی جنگی مشقیں کررہی ہے
انقرہ: تُرک بحریہ ملکی تاریخ کی سب سے بڑی جنگی مشقیں کررہی ہے

انقرہ (انٹرنیشنل ڈیسک) ترک فوج نے بحیرہ ایجیئن، بحیرہ روم اوربحیرہ اسود میں ملکی تاریخ کی سب سے بڑی جنگی مشقیں شروع کر دی ہیں۔ ترک وزارت دفاع کے مطابق ’’سی وولف‘‘ نامی ان مشقوں میں تقریباً 26 ہزار فوجی، 100 سے زائد جہاز، ہیلی کاپٹر اور ڈرون طیارے حصہ لے رہے ہیں۔ اس میں بری، فضائیہ اور بحریہ کے دستے آپس میں اپنے تعاون کی جانچ پڑتال کر رہے ہیں۔ رواں برس کے دوران ترک فوج کی دوسری بڑی مشقیں ہیں۔ علاوہ ازیں ترکی کے وزیر دفاع خلوصی آقار نے کہا ہے کہ ترکی کی مسلح افواج فیتو، پی کے کے، وائے پی جی، داعش اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کے خلاف جدو جہد پورے عزم کے ساتھ جاری رکھے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ ہم اندرون اور بیرون ملک دہشت گردی کے خلاف جدوجہد کے ساتھ بحیرہ ایجیئن، مشرقی بحیرہ روم اور قبرص میں بھی اپنے حقوق کے تحفظ کے لیے ہر طرح کی ضروری کارروائی کر رہے ہیں۔ قبل ازیں وزیر دفاع نے مسلح افواج کے سربراہ ، برّی، بحری اور فضائی افواج کے کمانڈرز کے ساتھ قومی دفاع یونیورسٹی نیول اکیڈمی میں طالبعلموں کے ساتھ افطار پروگرام میں شرکت کی۔