تاجربرادری نے نئے چیئرمین سے ایف بی آر میں بہتر اصلاحات کی امید لگا لی

21

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان یارن مرچنٹس ایسوسی ایشن( پائما)سندھ بلوچستان زون کے چیئرمین محمد ثاقب گڈ لک نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے نئے چیئرمین شبر زیدی کی جانب سے اپنی ذمہ داری سنبھالنے کے ساتھ ہی ایف بی آر میں کاروبار دوست اقدامات عمل میں لانے کو معاشی و اقتصادی سرگرمیوں کو فروغ دینے میں اہم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ تاجربرادری کو سب سے زیادہ ایف بی آر سے مسائل کا سامنا ہے خاص طور پر بے جا اختیارات کے باعث تاجربرادری کو ہراساں کرنا ایف بی آر حکام کا معمول بن گیاہے لہٰذا نئے چیئرمین کی جانب سے تاجروں کو ہراساں نہ کرنے کے احکامات کو تاجر برادری قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔ثاقب گڈ لک نے ایک بیان میں کہا کہ ملک اقتصادی طور پر اسی صورت میں ترقی کرے گا جب برابری کی بنیاد پر سازگار کاروباری ماحول فراہم کیا جائے اور ٹیکسوں میں کمی کرتے ہوئے ایسا نظام وضع کیاجائے جو سب کے لیے قابل قبول ہو۔انہوں نے کہاکہ ایف بی آر کے آئے دن بے جا اقدامات اور ہراساں کرنے کی وجہ سے تاجربرادری کا اعتماد بری طرح متاثر ہوا ہے اور نئے چیئرمین ایف بی آر کے لیے تاجربرادری کے اعتماد کو دوبارہ بحال کرنا ایک مشکل ٹاسک ہو گا تاہم شبر زیدی میں وہ تمام صلاحیتیں موجود ہیں جن کو بروئے کار لا کر وہ نہ صرف تاجربرادری کا بھروسہ قائم کرنے میں کامیاب ہوسکتے ہیں بلکہ ایف بی آر میں بہتر اصلاحات لا کرادارے کو کاروبار و صنعت دوست بنا کر ملک کو معاشی ترقی کی شاہراہ پر تیزی سے گامزن کرسکتے ہیں جس سے حکومت کے ریونیو میں بھی نمایاں اضافہ ہوگا۔چیئرمین پائما سندھ بلوچستان زون نے نئے چیئرمین ایف بی آر سے درخواست کی کہ وہ ٹیکسوں سے متعلق کوئی بھی پالیسی وضع کرنے یا اقدام اٹھانے سے پہلے اسٹیک ہولڈرز سے ضرور مشاورت کریں۔