خا ن حکومت نے ملک کو IMF کے ہاتھوں گروی رکھ دیا ہے، یونس دانش

28

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) جمعیت علما پاکستان (نورانی) کے مرکزی میڈیا کوآرڈنیٹر ڈاکٹر محمد یونس دانش نے کہا ہے کہ خا ن حکومت نے ملک کو IMF کے ہاتھوں گروی رکھ دیا ہے۔ 6ارب ڈالر قرضوں کے بدلے غریب عوام پر مہنگائی کا سونامی مسلط کردیاگیا ہے دال سبزی سے لیکر اشیا خورونوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں ہیں بجلی، گیس، پیٹرول کی گرانی کا جن سرچڑھ کر بول رہا ہے، جمہوریت کو گرہن لگ گیا، منتخب نمائندوں کی بجائے آئی ایم ایف کے ملازم پاکستان کی نمائندگی کرنے لگے معاہدہ اور مذاکرات IMF نمائندوں کے درمیان ہوئے بوجھ ملک اور قوم پر پڑے گا قرضوں کے سونامی سے تبدیلی آچکی ہے جس کے اثرات پورے میں دیکھے جاسکتے ہیں روزہ داروں کا سحر اور افطار کا بجٹ مشکل ترین ہوگیا ہے، ڈالر کی قیمت بلند ترین سطح کو پہنچ چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی 60 فیصد سے زائد آبادی خط غربت سے نیچے زندگی بسر کررہی ہے، جسے پینے کا صاف پانی بھی دستیاب نہیں، ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر کی فراہمی کا ڈرامہ بے نقاب ہوچکا ہے، قرضوں کے سونامی سے معیشت تباہ، عوام بدحال اور ملک دیوالیہ ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تبدیلی کا نعرہ دم توڑ رہا ہے، سونامی خان کے تمام دعوے اور وعدے ریت کی دیوار ثابت ہوئے ہیں، نہ لوڈ شیڈنگ ختم ہوئی، نہ گرانی کا سیلاب رک سکا بلکہ ملک کو قرضوں کے سونامی کے ذریعے عوام کا بھرکس نکالنے اور اشرافیہ کو نوازنے کا سلسلہ ہنوز جاری ہے۔ ریاست مدینہ کا نعرہ لگا کر اسلامی اقدار اور شریعت محمدیﷺ کومٹایا جارہا ہے اسلام کے نام پر قائم ہونے والے ملک میں مسلمان ہونا اور اسلام قبل کرنا مشکل ترین بنادیا گیا، مدارس کے گرد گھیرا تنگ اور علما کرام کی کردار کشی وزرا کا اہم مشغلہ بن گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام پارلیمانی جماعتیں موجود صورحال کی ذمے دار ہیں، اپوزیشن عوام کی حقیقی ترجمانی کرنے سے قاصر نظر آتی ہے ،ٹیکسوں کا بوجھ اور گرانی کا سونامی سے عوام کی مشکلات بڑھ رہی ہیں۔