بجلی وگیس مہنگی کرنے پر جماعت اسلامی کا اظہار تشویش

44

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکرٹری کاشف سعید شیخ نے آئی ایم ایف کی شرائط پر گیس و بجلی مزید مہنگی کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کہتے تھے کہ آئی ایم ایف سے قرض لینا باعث شرم ہوتا ہے خود کشی کو ترجیح دیں گے، مگر کسی بھیک نہیں مانگیں گے مگر بیروگاری، مہنگائی و بجلی بحران کے خاتمے سمیت دیگر وعدوں اور دعوں کی طرح آئی ایم ایف سے قرض نہ لینے کا دعویٰ بھی ادھورا ثابت ہوا۔ انہوں نے کہا کہ سودی معیشت ایک ’’لعنت‘‘ اور قوم پر اللہ کا عذاب ہے کیونکہ اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید میں سودکو اللہ اور اس کے رسول کے ساتھ جنگ کے مترادف قرار دیا ہے۔ حکومت کو واقعی اگر کفایت شعاری کی پالیسی اور ملک کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنا چاہتی ہے تو سودی نظام سے نجات حاصل کرنی ہوگی۔ آئی ایم ایف کی شرائط کو تسلیم کرتے ہوئے گیس و بجلی کی قیمتوں میں مزید اضافہ سے 340 ارب روپے صارفین کی جیبوںسے نکالے جائیں گے۔ حکومت عوام کو ریلیف دینے کے بجائے ان کی مشکلات میں مزید اضافہ کر رہی ہے جو کہ عوام کے ساتھ سراسر ظلم اور پی ٹی آئی حکومت کے دعووں کی نفی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے آئی ایم ایف کی شرائط کو تسلیم کر کے ملک و قوم کو عملی طور پر مالیاتی اداروں کے ہاں گروی رکھ دیاہے۔