دوا ساز کمپنیوں کا 395 ادویات کی قیمتوں میں کمی سے انکار

41

اسلام آباد (آن لائن) دوا ساز کمپنیوں نے395 ادویات کی قیمتوں میں کمی کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ یہ انکشاف سیکرٹری قومی صحت کی جانب سے گزشتہ روز سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے قومی صحت کے اجلاس میں کیا گیا۔ انہوں نے اجلاس میں بتایا کہ دواساز کمپنیوں نے قیمتوں میں کمی کے بجائے سندھ ہائی کورٹ سے اسٹے لے لیا ہے۔ سیکرٹری صحت نے کہا کہ حکومت قیمتیں کم نہ کرنے والی دواساز کمپنیوں کے خلاف ڈرگ کورٹ میں جائے گی اور دواساز کمپنیوں سے 4 ماہ میں کمایا گیا منافع بھی واپس لے گی‘ ادویات کی قیمتوں کا تعین ڈرگ پرائسنگ کمیٹی کرتی ہے‘ ادویات کی قیمتوں کے تعین میں ڈریپ کے سربراہ کا کوئی کردار نہیں ہے۔ سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے صحت کا اجلاس پارلیمنٹ ہائوس اسلام آباد میں ہوا۔ وفاقی سیکرٹری قومی صحت نے ادویات کی قیمتوں میں اضافے کے معاملے پر کمیٹی کو بریفنگ دی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق سیکرٹری صحت نے قائمہ کمیٹی کو بتایا کہ ادویات کی قیمتوں میں گزشتہ اضافہ2001ء میں کیا گیا تھا‘ 2013ء میں ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کر کے فیصلہ واپس لے لیا گیا جس پر دواساز کمپنیوں نے عدلیہ سے رجوع کیا۔