مراکش: پارلیمنٹ کا اسرائیل سے میل جول بڑھانے کی کوششوں پر حکومت کو انتباہ

167

مراکش میں اسرائیلی کمپنیوں کی مشکوک سرگرمیوں اور صہیونی ریاست کے ساتھ تال میل بڑھانے کی مذموم کوششوں پر پارلیمنٹ اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مراکش کے ایک پارلیمانی بلاک اور ایک غیر سرکاری تنظیم نے خبردار کیا ہے کہ اسرائیل بعض کمپنیوں‌ کے ذریعے مراکش میں نقب لگانے اور رباط کے ساتھ میل جول بڑھانے کی کوششوں میں سرگرم ہے اور اس طرح کی تمام سرگرمیاں ملک کے روایتی موقف کے خلاف ہیں۔

مراکش میں اسرائیل سے تعلقات مخالف رصدگاہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل کی “MIS Implants” نامی دندان ساز کمپنی سنہ 2020ء میں مراکش میں بین الاقوامی کانفرنس کرانا چاہتی ہے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں نے استفسار کیا ہے کہ ریاست کا ایسا کون سا ادارہ ہے جو اسرائیلی کمپنی کو مراکش میں مشکوک سرگرمیوں کی اجازت فراہم کر رہا ہے ؟؟!

ادھر پارلیمنٹ میں شامل ایک پارلیمانی بلاک نے ایوان میں ایک نئی قرار داد لانے کی کوشش شروع کر دی ہے جس کا مقصد اسرائیل کے ساتھ تعلقات بڑھانے کی سازشوں کی روک تھام کرنا ہے۔

پارلیمانی بلاک نے حکمراں جماعت انصاف و ترقی کے سربراہ کے سامنے بھی معاملہ اٹھانے اور اسرائیلی کمپنیوں کے اعلانیہ اور خفیہ سرگرمیوں کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔