مولانا عبدالباری کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی،ڈاکٹرخالد محمود

80

اسلام آباد( پ ر) جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ مولانا عبدالباری مرحوم نے اپنی ساری زندگی میں تحریک آزادی کشمیر کے لیے قائد کی حیثیت سے عملی جدوجہد کی ، آزادکشمیر کے ایک ایک علاقے میں دین کے ابلاغ کے لیے جا کر عوام تک جماعت کی دعوت پہنچائی، جرأت، بے باکی اور حق گوہی مولانا کی پہچان تھی کسی بھی مرحلے پر سمجھوتا نہیں کیا بلکہ اپنے مؤقف پر ڈٹے رہے ،جماعت اسلامی آزادکشمیر کے بانی امیر کی حیثیت سے پورے آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں جماعت کے کام کو منظم کیا ، آزادکشمیر میں اسلامی انقلاب کا قیام ان کا مشن تھا جس کے لیے جماعت اسلامی جدوجہد کررہی ہے ،مولانا عبدالباری کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ان کے خاندان کے افراد تحریک کا حصہ بن کر اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔ان خیالات کااظہار انہوں نے با نی امیر جماعت اسلامی مولانا عبدالباری مرحوم کی یادمیں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔سیمینار سے نائب امیر جماعت اسلامی و امیر مہاجرین مقیم پاکستان نورالباری،برگیڈئر عبدالسلام اختر،ڈاکٹر صادق، پروفیسر مصطفی،حنیف اخترنے خطاب کیا۔سیمینارمیں نائب امرا جماعت اسلامی راجا جہانگیر خان،سردار ارشد ندیم،سیکرٹری جنرل الخدمت فائونڈیشن آزادکشمیر آفتاب عالم ایڈووکیٹ،سجاد انور، انعام الباری،اکرام الباری ، حافظ عطا الباری، فیصل راٹھور،مصباح الباری،محاذ الباری،اسامہ صادق سمیت مولانا عبدالباری کے خاندان کے خواتین و حضرات نے شرکت کی۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہاکہ مولانا عبدالباری مرحوم کے سارے خاندان کے شکر گزار ہیں جنہوں نے ہمارے ساتھ بھرپور معاونت فرمائی،مولانا نے کمال بہادری،جرأت اور فقیرانہ انداز میں تحریک آزادی کشمیر کا آغاز کیا ،آج نورالباری اس کی رخلت کے بعد اس مشن کو قائدکی حیثیت سے لے کر چل رہے ہیں تحریک کے لیے وقت اور وسائل برئوے کار لارہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ مولانا نے جس نظریے کے لیے اپنی تمام تر صلاحیتیں صرف کیں ہم اسی نظریے کے امین ہیں ان کے اس مشن کی تکمیل کے لیے پورے خاندان کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ اس جدوجہد میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں ،اپنے آپ کو اس مشن کے ساتھ جوڑیں پختہ وابستگی اور ابلاغ کی ضرورت ہے ،اپنے دائرے میں رہتے ہوئے ویژن 2030ء کی روشنی میں حصہ ڈالیں ۔اس موقع پر قائدین جماعت اسلامی نے مولانا کو خراج عقید ت پیش کیا اور کہا کہ ان کی کوششوں اور کاوشوں کی وجہ سے آج جماعت اسلامی آزادکشمیر کے ہر خطے میں موجود ہے ۔