وکلا مظلوم کو انصاف اور ظالم کو سزا دلانے میں عدلیہ کی معاونت کرتے ہیں، ظفر شیخ

33

 

سرگودھا (اے پی پی) کمشنر سرگودھا ڈویژن ظفر اقبال شیخ نے کہا ہے کہ وکالت ایک مقدس پیشہ ہے، وکلا مظلوم کو انصاف اور ظالم کو سزا دلانے میں عدلیہ کی معاونت کرتے ہیں ۔ وکلا کی ہڑتالوں سے عدالتی نظام متاثرہوتا ہے جس سے اس اہم پیشے کی قدر و منزلت میں کمی کا رجحان پیدا ہو رہا ہے۔ وکلا اپنے مضبوط دلائل سے اپنا موقف منوائیں ، عدلیہ اور عدالتوں کا احترام کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملاقات کے لیے آنے والے قائد اعظم لا کالج کے 6 رکنی وفد سے سوال وجواب کی نشست کے دوران کیا ۔ وفد کے سربراہ علی احمد ننگیانہ تھے جبکہ دیگر اراکین میں آمنہ نفیس ، انعم شہزادی ، عبداللہ بھٹی ، تیمور احمد اورجنید شامل ہیں ۔ کمشنر نے کہا کہ وکلا اپنی صفوں سے کالی بھیڑوں کو نکال باہر کریں تاکہ عدالتی فیصلوں پر اثر انداز ہونے والے عناصرکو روکا جاسکے ۔انہوں نے کہاکہ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح بلند پایہ وکیل تھے جنہوں نے اپنے مضبوط دلائل اور نظریات سے ہندواور انگریزوں کی سازشوں کا مقابلہ کیا، وہ قلم اور دلائل کی جنگ کرتے تھے اور دھونس دھاندلی سے گریز کرتے تھے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ پاکستانی قوم کو اپنی ذمے د اریوں کا احساس کرنا چاہیے وہ حق تو مانگتی ہے لیکن فرائض سے غافل ہے، جو ہماری ہمہ جہت مشکلات اور مسائل کاسبب ہے۔ انہوں نے وکلا پر زور دیا کہ وہ اچھے انسان بنیں، اپنے ضمیر کی آواز سنیں اور مظلوم کاساتھ دیں، ظلم کی نفی کریں اس طرح معاشرہ امن وآشتی کاگہوارہ بن جائے گا اور جرم کا خاتمہ ہوگا۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ ان کے دروازے ہر کسی کے لیے کھلے ہیں وہ سائلین کی دادرسی اور اپنی ذمے د اریوں سے انصاف کرتے ہیں اور چین کی نیند سوتے ہیں۔ انہوں نے وکلا اور دیگر افسران پر زور دیا کہ وہ اپنے پیشے سے انصاف ، ایمانداری اور خلوص کو اپنی زندگی کا حصہ بنائیں۔ انہوں نے کہاکہ کمشنر آفس حکومت کا نمائندہ دفتر ہے اور اس کی حدود وسیع ہے ، وزیر اعظم پاکستان ایمانداری اور انصاف کو اولیت دیتے ہیں اس لیے ہم سب کو چا ہیے کہ ان کے نظریات کو پنائیں ۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ اربنائزیشن ایک المیہ ہے جس کی بنیادی وجہ مینو فیکچرنگ کے لیے وسائل کی عدم دستیابی رہا ہے، تاہم اب بجلی اور توانائی کی پیداوار کی بہتری کے باعث سرمایہ دار رئیل اسٹیٹ سے صنعت کاری کی طرف آرہے ہیں، جس کی دوسری وجہ پانی کی کمی اور زمین کی ذرخیزی کا فقدان بھی ہے۔ انہوں نے آبادی میں بے ہنگم اضافہ کو بھی اربنائزیشن کی بڑی وجہ قرار دیا۔ لا کالجز طلبہ میں اخلاق و کردار، پیشے سے لگن، محنت اور خلوص کو پروان چڑھائیں، ڈگریاں بانٹنے کے بجائے قانون کا علم دیں تاکہ وہ گروہ بندی اور غصے کے بجائے اپنے دلائل سے اپنے مطالبات منظور کرواسکیں۔ ڈویژن بھر میں ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ فنڈز کی کمی کے باعث بہت سے منصوبے عدم تکمیل کا شکار ہیں تاہم مالی مشکلات کے باوجود عوام کو بہتر سہولتیں فراہم کرنا ہمارا مشن ہے۔ سرگودھا میں پینے کے صاف پانی ، سیوریج اور پختہ گلیوں پر خطیر فنڈز خرچ کیے جارہے ہیں۔ انہوں نے وفد کو پیشہ وارانہ ادائیگی کے ضمن میں اپنے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ وفد نے کمشنر کے تعاون پر شکریہ ادا کیا