مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے عہدے کا چارج سنبھال لیا

131

مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے عہدے کا چارج سنبھال لیا ہے۔ ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ ریونیو اور اقتصادی امور کی وزارتیں بھی دیکھیں گے اور ان کا عہدہ وفاقی وزیر کے برابر ہوگا۔

مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ وزارت خزانہ پہنچے جہاں انہوں نے سیکریٹری خزانہ یونس ڈھاگہ سے ملاقات کی۔سیکریٹری خزانہ نے نئے بجٹ اور آئی ایم ایف سے مذاکرات کے حوالے سے آگاہ کیا، ملاقات میں ملک کو درپیش معاشی چیلنجز کے حل کے لیے روڈ میپ پر بھی گفتگو کی گئی۔

عبدالحفیظ شیخ آج وزیراعظم عمران خان سے بنی گالہ میں ملاقات بھی کریں گے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نئے مشیر خزانہ کو پی ٹی آئی منشور، اقتصادی پالیسی اور روڈ میپ پر ہدایات دیں گے۔ وزیراعظم عمران خان بجٹ 20-2019 متعلق اپنا وژن اور پلان بھی مشیر خزانہ کو بتائیں گے، اس کے علاوہ ملاقات میں آئی ایم ایف مذاکرات اپ ڈیٹ اورپ اکستان کے مؤقف پر بھی تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

دوسری جانب صدر مملکت نے سابق وزیر خزانہ اسد عمر کا استعفیٰ بھی منظور کر لیا ہے اور وہ گزشتہ رات اسلام آباد سے کراچی پہنچ گئے ہیں۔کراچی روانگی سے قبل اسد عمر کا پی ٹی آئی اسلام آباد کے کارکنوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اسلام آباد سے تعلق نہیں توڑ رہا، بطور ایم این اے آنا جانا لگا رہے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ جتنا ضروری ہوا اسلام آباد آؤں گا، باقی وقت کراچی میں رہوں گا، وزارت چھوڑنے پر پریشانی نہیں پُرسکون ہوں۔

خیال رہے کہ حفیظ شیخ کو دو روز قبل وزیر خزانہ اسد عمر کے مستعفی ہونے کے بعد مشیر خزانہ مقرر کیا گیا تھا۔