بلدیہ فٹبال اسٹیڈیم کا بجلی کا میٹر کریم خان کے نام پررجسٹرڈ

110
فٹبال اسٹیڈیم میں رہائش پذیر کریم خان روزنامہ جسارت کو تفصیلات بتاتے ہوئے
فٹبال اسٹیڈیم میں رہائش پذیر کریم خان روزنامہ جسارت کو تفصیلات بتاتے ہوئے

کراچی (اسٹاف رپورٹر)بلدیہ اسٹیڈیم فٹبال اسٹیڈیم کے بارے میں ہوا ہے کہ انکشاف کیا کہ گزشتہ کئی سال سے اس بلدیہ فٹبال کمپلیکس کا بجلی کا بل بھی اسی کے نام پرآرہا تھا تاہم اب یہ سلسلہ دو ماہ پہلے ہی رک چکا ہے جس کی بحالی کے لیے متعدد بار کے الیکٹرک سمیت دیگر متعلقہ اداروں میں درخواستیں بھی دے چکا ہے۔ اسٹیڈیم میں رہائش پذیرکریم خان کے مطابق اسٹیڈیم میں بجلی کا کوئی دوسرا نظام موجود نہیں ،ایک جنریٹر جو مصطفی کمال کے دور میں لاگیا تھا وہ چوری ہوچکا ہے اور اس کا ڈھانچہ اب بھی اپنی جگہ پر خستہ حال موجود ہے۔ کریم خان نے مزید انکشاف کیا کہ ان 10سالوں میں کوئی بھی حکومتی نمائندہ اس طرف نہیں آیا،سندھ حکومت اور کے ایم سی کی طرف سے ٹھیکہ اب گلریز کنسٹرکشن کمپنی کو دیاگیا ہے جو کبھی کبھار آکر ایک دو دن کام کرنے کے بعد پھر غائب ہوجاتے ہیں۔ ٹھیکیدار شاہد کا حوالہ دیتے ہوئے کریم خان نے بتایا کہ ان لوگوں کا سامان بھی یہاں موجود ہے جس کی وہ دیکھ بھال کرتا ہے اور اس کے بدلے میں اسے کوئی رقم نہیں ملتی۔ کریم خان نے ایک اور انکشاف کیا کہ ڈی سی کی جانب سے 28لاکھ روپے کا آڈرجاری کیاگیا ہے جس کے مطابق یہاں کمرے بنائے جانے ہیں تاہم بلدیہ ٹاؤن کے ایک افسرسبطین کی جانب سے چیک کلیئر نہیں کیاجارہا اور چار سال سے یہ ہی کہا جارہا ہے کہ فنڈز نہیں ہیں۔ جب کہ ٹھکیدار کی جانب بھی اسی طرح کام کرتا ہے اور اس کا بھی یہ ہی کہنا ہے جتنا فنڈآتا ہے اتنا کام کرتے ہیں۔ جب اس حوالے سے ٹھیکیدار سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تو اس کا نمبرمسلسل بند جارہا تھا۔