آسیہ مسیح جلد پاکستان چھوڑ دے گی ،عمران خان

176
فائل فوٹو

اسلام آباد/لاہور(نمائندگان جسارت+آن لائن+آئی این پی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آسیہ مسیح جلد پاکستان چھوڑ دے گی ۔ان کے بقول اس حوالے سے تھوڑی پیچیدگی ہے لیکن اس بارے میں میڈیا سے بات نہیں کرسکتا ،یقین دلاتا ہوں آسیہ محفوظ ہے۔بی بی سی کوانٹرویو دیتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان صرف ایک اختلاف ہے اور وہ کشمیر ہے، جوہری ہمسائے اپنے اختلافات کو صرف مذاکرات کے ذریعے ختم کر سکتے ہیں، متنازع علاقے کشمیر میں امن خطے کے لیے بہت زبردست ہوگا، کشمیر میں جو کچھ بھی ہو رہا ہے وہ وہاں کے لوگوں کا رد عمل ہے، اگر ہم مسئلہ کشمیر کو حل کر سکتے ہیں تو برصغیر میں امن کے زبردست فوائد سامنے آئیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کی حکومتوں کی اولین ترجیح غربت میں کمی لانا ہونی چاہیے اور غربت کو کم کرنے کا راستہ یہ ہے کہ ہم اپنے اختلافات کو مذاکرات کے ذریعے حل کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت دوبارہ حملہ کرتا تو ہمارے پاس جواب دینے کے سوا کوئی راستہ نہیں تھا۔ عمران خان نے کہا کہ جیش محمد اور اس جیسی تنظیموں کو ہم پہلے ہی غیر مسلح کر رہے ہیں اور حکومت نے جیش محمد کے مدارس کا کنٹرول سنبھال لیا ہے، پاکستان کے مستقبل کے لیے حکومت ان تنظیموں کے خلاف کارروائی کے لیے پرعزم ہے۔ علاوہ ازیں وزیر اعظم عمران خان ایک روزہ دورے پر لاہور پہنچے جہاں انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کی۔ جس میں وزیر اعظم نے پنجاب کے آئندہ بجٹ میں کمزور طبقے کو ریلیف دینے کی ہدایت کی۔وزیر اعظم نے عثمان بزدار کو رمضان المبارک میں عوام کو ہر ممکن ریلیف فراہم کرنے اور شیلٹر ہومز کی تعمیر کا عمل جلد از جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ وزیر اعظم نے مصنوعی مہنگائی کرنے والے افراد کے کارروائی کا حکم دیااورادویات کی قیمتیں 72گھنٹو ں میں پرانی سطح پر واپس لانے کی ہدایت کی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ۔وزیراعظم نے کہا ہے کہ شہباز شریف کو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بنا کر مجھ سے غلطی ہوئی کچھ لوگوں نے مجھے اس معاملے پر غلط مشورہ دیا تھا تاہم ہم نے حمزہ شہباز کو پی اے سی پنجاب کا چیئرمین نہ بناکر اچھا کیا ہے۔،وزیر اعظم نے شریف خاندان کی کرپشن کے مزید ثبوت سامنے لانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ شریفوں سے نہ ڈریں، اب وہ واپس نہیں آئیں گے ، مستقبل میں 2 جماعتوں کا ڈٹ کرمقابلہ کرنا ہے، حمزہ شہباز کے کرپشن کیس میں بڑی محنت کی گئی، وہ جلدگرفتارہوں گے۔ وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ عوام کومزید مہنگائی برداشت کرنا پڑے گی، اگلے 3ماہ انتہائی مشکل ہیں، کارکنان بلدیاتی انتخابات کی تیاری کریں۔