نواز شریف علاج کرانا نہیں ، لندن جانا چاہتے ہیں، فواد چودھری

168

اسلام آباد(نمائندہ جسارت) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ نواز شریف کے معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد کیا جائے گا ، نواز شریف کو علاج کی تمام سہولیات میسر ہیں مگر وہ علاج نہیں کرانا چاہتے ، لندن جانا چاہتے ہیں ، نواز شریف سے کوئی ذاتی لڑائی نہیں ان پر 300 ارب روپے کا الزام ہے وہ ہمارے نہیں قوم یا نیب کے مجرم ہیں۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ 6 جنوری کو جیل حکام نے بتایا نواز شریف کو سانس کی تکلیف ہے لہٰذا کوئی ڈاکٹر بھیجا جائے جس پر کارڈیالوجسٹ پروفیسر ڈاکٹر شاہد حمید کو بھیجا گیا۔ انہوں نے نواز شریف کا چیک اپ کیا اور کہاکہ ان کو پی آئی سی میں ریفر کردیا جائے ،22 جنوری کو نواز شریف کے پی آئی سی میں ابتدائی ٹیسٹ ہوئے جن سے پتا چلا کہ ان کو کوئی ایسا مسئلہ نہیں پھر 25 جولائی کو بورڈ تشکیل دیا گیا۔ بورڈ نے ان کا مکمل معائنہ کیا بظاہر نواز شریف کو دل کا کوئی خاص مسئلہ نہیں تھا نواز شریف لندن جانا چاہتے ہیں حکومت پنجاب کی ہدایت پر 3ڈاکٹر جیل کے باہر اس انتظار میں ہیں کہ میاں صاحب ان کو چیک اپ کی اجازت دیں مگر ابھی تک اُن کو اجازت نہیں ملی۔