مغرب اسلام کو سخت گیر مذہب بنا کر پیش کرتا ہے، راشد نسیم

184

لاہور ( نمائندہ جسارت)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان راشدنسیم نے کہا ہے کہ مغرب اور یورپ اسلام کو سخت گیر اور انسانیت دشمن مذہب بنا کر پیش کرتے ہیں جس کی وجہ سے نیوزی لینڈ جیسے واقعات پیش آتے ہیں۔حالانکہ اسلام ایک پرامن اور انسانیت سے محبت کرنے والا دین ہے۔اسلام عالمی امن کا سب سے بڑا داعی ہے۔حقیقت یہ ہے کہ تاریخ انسانی میں لاکھوں انسانوں کا قتل عام کرنے والوں کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں تھا بلکہ وہ دیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والے تھے۔جیکب آباد اور لاڑکانہ میں ماڈل اسٹڈی سرکلز کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے راشد نسیم نے کہا کہ عراق ،افغانستان اور شام میں لاکھوں مسلمانوں کا قتل عام کرنے والا امریکا خو د کو دنیا کامذہبی ملک سمجھتا ہے جبکہ عراق پر حملہ کرنے کے لیے امریکی صدر بش نے جھوٹ بولا جس کا اعتراف خود امریکی میڈیا نے کیا۔جنگ عظیم اول اور دوئم میں بھی 8کروڑ معصوم انسانوں کا قتل عام کرنے والے مسلمان نہیں تھے۔ ناگاساکی اور ہیروشیما پر انسانی تاریخ میں پہلی بار ایٹم بم چلانے اور لاکھوں انسانوں کو راکھ بنانے والا بھی امریکا تھا۔امریکا نے ویت نام کی جنگ میں 5 لاکھ اور کمبوڈیا میں3 لاکھ انسانوں کو موت کے گھاٹ اتارا۔انہوں نے کہا کہ آج ہر جگہ مسلمان مظلوم ہیں،ان کے علاقوں پر قبضہ کیا گیا ہے۔فلسطین اور کشمیر اس کی واضح مثالیں ہیں۔راشدنسیم نے کہا کہ آج انسانیت امن کی تلاش میں اسلا م کے دامن میں پناہ لے رہی ہے۔مغرب اور یورپ میں تیزی سے اسلام پھیل رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ مستقبل اسلام کا ہے۔مغرب جھوٹ اور فریب کے سہار ے زیادہ عرصے تک لوگوں کو گمراہ نہیں کرسکتاہے اور نہ اسلام کی روشنی کو پھیلنے سے روک سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ دنیا کو آج امن اور سکون کی تلاش ہے اور یہ امن اور سکون صرف اسلام کے پیغام رحمت میں ہے۔دریں اثنا نائب امیر جماعت اسلامی راشد نسیم نے دھامرہ میں جماعت اسلامی کی مرکزی شوریٰ کے رکن حافظ محمد سعید اور ضلعی امیر عاشق دھامرہ کے بھائی محبوب دھامرہ کی وفات پر ان کی رہائش گاہ پر جاکر اظہار تعزیت کیااور مرحوم کے ایصال ثواب کے لیے فاتحہ خوانی کی۔راشدنسیم نے محبوب دھامرہ جو خود بھی رکن جماعت تھے ان کی وفات کو تحریک کے لیے ایک بڑا نقصان قرار دیا ۔انہوں نے مرحوم کی دینی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم نے اپنی پوری زندگی ملک میں غلبہ دین کے لیے وقف کررکھی تھی۔