پاکستان اسلامی تعاون تنظیم کا ڈپٹی چیئرمین منتخب

204

پاکستان نے پارلیمانی ڈپلومیسی میں ایک اور سنگ میل عبور کرتے ہوئے اسلامی تعاون تنظیم کی پارلیمانی یونین کی جنرل باڈی کی ڈپٹی چیئرمین کی نشست حاصل کرلی۔ اس کے ساتھ ساتھ پاکستان کی خواتین کی نمائندہ اور رکن قومی اسمبلی نورین فاروق کو 8ویں مسلم ویمن پارلیمنٹیرین کانفرنس میں نائب صدر منتخب کیا گیا۔

اس حوالے سے کیے جانے والے باضابطہ اعلان کے مطابق مراکش کے شہر رباط میں جاری 4روزہ کانفرنس کے پہلے دن پاکستان، اسلامی تعاون تنظیم کی پارلیمانی یونین کی جنرل باڈی کا نائب چیئرمین منتخب ہو گیا۔

کانفرنس میں پاکستان کے 4 رکنی وفد کی قیادت کشمیر کمیٹی کے چیئرمین سید فخر امام کر رہے ہیں، جبکہ دیگر اراکین میں احسن اقبال، قاسم نون اور نورین فاروق شامل ہیں۔ اسلامی تعاون تنظیم کی پارلیمانی یونین تنظیم کے رکن ممالک کی پارلیمنٹس پر مشتمل ہوتی ہے، اس کا قیام 1999ء میں ایران میں عمل میں آیا تھا جب اس کا صدر دفتر تہران میں واقع تھا۔

اس کانفرنس میں پاکستان کا وفد بھیجنے کا اصل مقصد دنیا کے سامنے کشمیر کے مسئلے کو موثر طریقے سے اجاگر کرنا تھا۔ مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں پر بھارتی فوج کے مظالم اور غیر انسانی سلوک پر اسلامی تعاون تنظیم کی پارلیمانی یونین میں پاکستان کی جانب سے جمع کرائی گئ 2 قراردادیں بھی منظور کرلی گئیں۔