نیشنل لیبر فیڈریشن نظام کی تبدیلی میں کردار ادا کرے، سراج الحق

88

 

رپورٹ۔۔۔قاسم جمال

پاکستان کے محنت کشوں نے سوشلزم اور کمیونزم کے خلاف تاریخی جنگ لڑی ہے ۔محنت کشوں کو مراحات دیے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا۔سرمایہ دارانہ نظام بھی جلد زمین بوس ہوجائیگا ۔نیشنل لیبر فیڈریشن کوپاکستان کے محنت کش کے حقوق کیلئے اپنی جدوجہد کو تیز کرنا ہوگا۔یہ بات جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سراج الحق نے نیشنل لیبر فیڈریشن پاکستان کے صدر شمس
الرحمان سواتی سے خصوصی ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔سراج الحق نے کہا کہ سرمایہ دارانہ نظام نے پوری دنیا کے نظام کو مفلوج کردیاہے ۔غربت اور مہنگائی نے غریبوں کی
زندگی اجیرن بنا دی ہے ۔قومی ادارے تباہ ہوگئے ہیں ۔محنت کشوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔
سودی معیشت نے پاکستان کو تباہی کے دھانے پر دکھیل دیا ہے ۔این ایل ایف کو ان حالات میں آگے بڑھ کر اپنا کردار ادا کرنا ہے اور چہروں کے بجائے نظام کو تبدیل کیا جائے ۔نظام کی تبدیلی ہی محنت کشوں کو انصاف فراہم کرسکتی ہے ۔پاکستان میں 70سال سے اشرافیہ کی حکمرانی ہے جنھوں نے قوم کی دولت کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا ہے اور غیر منصفانہ نظام کی وجہہ سے غریب اور زیادہ غریب ہوا اور امیر امیر تر ہوگیا ہے ۔وقت آگیا ہے کہ پاکستان کے پسے ہوئے طبقے مزدور کسان کو متحد اور یکجا کیا جائے اور منظم محنت کشوں کے ساتھ ساتھ غیر منظم محنت کشوں کو بھی متحدکیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام کا عادلانہ نظام ہی محنت کشوں کے حقوق کا محافظ ہے ۔نظام کی تبدیلی کیلئے این ایل ایف اپنا اہم کردار ادا کرے ۔این ایل ایف کے مرکزی صدر شمس الرحمان سواتی نے سراج الحق کو یقین دہانی کروائی کہ پاکستان کے مجبور مظلوم طبقے کے حقوق کے حصول کیلئے این ایل ایف پوری قوت کے ساتھ کام کرے گی اور ظلم کے نظام کا خاتمہ کیا جائے گا۔