طالبان پر اعتماد نہیں،کچھ فوجی دستے افغانستان میں رہیں گے، امریکا

107

واشنگٹن/اسلام آباد(خبر ایجنسیاں)امریکی مشیر قومی سلامتی جان بولٹن نے کہا ہے کہ امریکا دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لیے افغانستان میں موجود رہے گا۔امریکی مشیر قومی سلامتی جان بولٹن نے امریکی نشریاتی ادارے کو دیے گئے اپنے ایک انٹرویو میں کہا کہ وائٹ ہاؤس انتظامیہ طالبان پر اندھا اعتماد کرنے کو تیار نہیں اس لیے اہم سیکورٹی حکام افغانستان میں دہشت گردی کو کاؤنٹر کرنے کے لیے امریکی فوج کے کچھ دستوں کی موجودگی پر غور کر رہے ہیں۔جان بولٹن کا مزید کہنا تھا کہ اس حوالے سے امریکا میں بڑے اقدامات پر غور کیا جا رہا ہے اور آئندہ ہفتے پیشرفت سامنے آسکتی ہے۔ دوسری جانب امریکا نے پاکستان میں نئے امریکی سفیر کی تعیناتی کا تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔امریکی سفارتخانے کے ترجمان رچرڈ سنلسیری نے کہا کہ پال جونز امریکی سفارتخانے کے ناظم امور کے طور کام کررہے ہیں تاہم امریکا نے مستقل سفیر کی تعیناتی سے متعلق کوئی فیصلہ نہیں کیاگیا۔ایک سوال کے جواب میں ترجمان کا کہنا تھا کہ امریکا پاکستان اور بھارت کے مابین جاری کشیدگی کو ختم کرنے کے لیے کوشاں ہے اور اس سلسلے میں دونوں ممالک کے ساتھ رابطے میں ہے ، جنوبی ایشیا میں پائیدار امن کے لیے دونوں ایٹمی قوتوں کو مل کر بات چیت کے ذریعے معاملات کو طے کرنا چاہیے۔