نیسلے پاکستان کا کلین گرین پاکستان موومنٹ سے معاہدہ

192
ہیڈکارپوریٹ افیئرز نیسلے، وقار احمداور وزیر اعظم کے مشیر، ملک امین اسلم کا، مفاہمت کی یادداشت کے موقع پر
ہیڈکارپوریٹ افیئرز نیسلے، وقار احمداور وزیر اعظم کے مشیر، ملک امین اسلم کا، مفاہمت کی یادداشت کے موقع پر

اسلام آباد (کامر س ڈیسک) نیسلے پاکستان نے اکتوبر 2018ء میں وزیر اعظم پاکستان کی جانب سے شروع ہونے والی تحریک، کے زیر تحت منسٹری آف کلائمٹ چینج کے ساتھ، کلین گرین پاکستان موومنٹ (Clean Green Pakistan movement) کے لیے مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط کیے ہیں۔ کلین گرین پاکستان یعنی صاف ستھرا اورسر سبز پاکستان اس مہم کا سب سے اہم اور ضروری پہلو ہے جو زیادہ تر جنگلات کے علاقوں کا احاطہ کرتا ہے اور اسی طرح وہ دیہاتی / شہری علاقے جہاں صفائی کی صورتحال ناقص ہے اس کے زمرے میں آتے ہیں۔ کلین گرین پاکستان وزارتِ ماحولیات کی شروع کردہ ایک مہم ہے جو حفظان صحت کے شعور سمیت مائع اور فضلہ مینجمنٹ کی حفظان صحت کے اصولوں پر توجہ مرکوز کرتا ہے؛ محفوظ پینے کے پانی تک رسائی؛ شجر کاری بمعہ ایک وسیع پیمانے پر afforstation مہم اس میں شامل ہیں، اس کے علاوہ ٹھوس گندگی کی نکاسی بمعہ عوامی جگہوں ، اسکولوں اور سڑکوں پرصفائی کاعزم اس مہم کا حصہ ہیں اس مہم کے زیر تحت اقدام کے ذریعہ، نیسلے پاکستان اپنے پروگرام برائے نیسلے ہیلدی کڈز اور ہیلدی ویمن کے اقدامات پر حفظانِ صحت کے بارے میں آگاہی کا فروغ کرے گا۔ نیسلے کے اپنے پروگرام ایمپلائی والنٹیئر پروگرام Employee Volunteer Program (EVP) کے تحت پاکستان کے مختلف شہروں میں عوامی جگہوں کی صفائی کی مہم بھی شروع کرے گا۔ نیسلے پاکستان اپنی شجر کاری مہم کے تحت 50,000 درخت اپنی مختلف سائٹس میں لگانے کا عزم بھی رکھتا ہے۔ نیسلے پاکستان کے”Caring for Water” اقدام کے طور پر، ملک بھر میں 60,000 کمیونٹیز کو پینے کا صاف پانی فراہم کیا جاتا ہے۔اس موقع پر نیسلے کے کارپوریٹ افیئرز کے ہیڈ، وقار احمد نے کہا:’’کلین گرین پاکستان کے اقدام نے ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنج کو حل کرنے کے لیے وزیر اعظم پاکستان کے عزم کی عکاسی کی ہے۔