ایم ڈی اے نے تیسر ٹاون میں سستے رہائشی پلاٹوں کی اسکیم کا اعلان کردیا۔

600

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )80 ، 120 ، 240 اور 400 گز کے پلاٹس قرعہ اندازی کے ذریعے ضرورت مند درخواست گزاروں کو الاٹ کیے جائیں گے۔ پلاٹ کی قیمت 80 ہزار سے 12 لاکھ روہے مقرر کی گئی ہے۔ ہر درخواست گزار تمام کٹیگری کے پلاٹس کے لیے درخواست دے سکے گا۔

ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی( ایم ڈی اے ) نے کم قیمت رہائشی پلاٹوں کی اسکیم کا باقاعدہ اعلان کردیا ہے۔ اسکیم کے لیے درخواست فارم سلک بنک کے مختلف شا خوں میں مفت دستیاب ہے۔ یہ اسکیم نادرن بائی پاس ( ایم نائن ) سے منسلک اراضی تیسر ٹاون میں ہوگی۔ اسکیم کے تحت 80 ، 120 ، 240 اور 400 گز کے رہائشی پلاٹس سستے داموں اور آسان اقساط کی بنیاد پر ضرورت مند شہریوں کو قرعہ اندازی کے ذریعے الاٹ کیے جائیں گے۔ خیال رہے کہ سرکاری شعبے کی یہ پہلی بڑی اسکیم ہوگی جو کم ازکم 22 سال بعد متعارف کرائی جارہی ہے۔ اس اسکیم کے درخواست فارم سلک بنک کی تمام شاخوں سے بغیر کسی چارجز کے دستیاب ہیں۔

ایم ڈی اے کے اعلامیے کے مطابق درخواست فارم ایم ڈی اے کی ویب سائیٹ www.taisertown.com.pk اورwww.mda.gos.pkپر دستیاب ہے۔ اعلامیے میں واضح کیا گیا ہے کہ ایم ڈی اے نے اس اسکیم میں 80 گز کے پلاٹ کی قیمت 80 ہزار ، 120 گز کے پلاٹ کی قیمت ایک لاکھ 20 ہزار 240 گز کے پلاٹوں کی قیمت 5 لاکھ 28 ہزار اور 400 گز کے پلاٹ کی قیمت 12160 لاکھ روپے مقرر کی ہے جس میں ڈیولپمنٹ چارجز اور یوٹیلیٹی چارجز شامل نہیں ہیں وہ علیحدہ وصول کیے جائیں گے۔

ایم ڈی اے نے اسکیم میں شہریوں کو تمام پلاٹوں کے حصول کے لیے قسمت آزمانے کا موقع بھی دے رہا ہے۔ انہیں ہر کٹیگری کے پلاٹس کے لیے درخواست جمع کرانے کی سہولت دی جارہی ہے۔قرعہ اندازی میں کسی بھی کٹیگری کا ایک پلاٹ نکلنے کی صورت میں انہیں دیگر پلاٹس سے درخواست واپس لینے کی شرط ہوگی۔ اسکیم کے تحت ہر درخواست گزار اپنے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ کے عوض کسی بھی کٹیگری کا صرف ایک ہی پلاٹ لینے کا حق دار ہوگا انہیں ایک سے زائد پلاٹ نہیں دیا جائے گا۔ ملیر

ڈولپمنٹ اتھارٹی کی تیسر ٹاؤن میں ایک نئی اورسستی رہائشی اسکیم میں 30 ہزار پلاٹس حیرت انگیز نرخ میں دستیاب ہونگے۔ سہیل خان کا کہنا ہے کہ حکومت سند ھ شہر میں ایک بڑی اسکیم متعارف کروائی ہے جس سے شہر میں رہائش کا بڑا بحران حل کیا جاسکے اور ان کے اسی و ژن کو سامنے رکھتے ہوئے ایم ڈی اے نے تیسرٹاؤن میں 30ہزار پلاٹس پر مشتمل ایک ماسٹر پروگرام اسکیم شروع کی ہے جس سے محکمہ کو 22ارب روپے کی آمدنی ہوگی اور اس آمدنی کا ایک بڑا حصہ اس اسکیم کو مکمل کرنے کیلئے اس کے ترقیاتی کاموں پر خرچ کیا جائے گا۔ 

سہیل خان نے تیسر ٹاؤن میں ماسٹر پروگرام کے نام سے شروع کی گئی اسکیم کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ 30 ہزار پلاٹس کا مطلب یہ ہے کہ کم از کم پانچ لاکھ لوگوں کی رہائش کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔ جبکہ اس اسکیم میں سب سے چھوٹا پلاٹ 80 گز کا ہے۔ اور اس کی قیمت صرف 80 ہزار روپے رکھی گئی ہے جو انتہائی کم آمدنی والے لوگ بھی خرید سکتے ہیں کیونکہ یہ 80 ہزار بھی انہیں مختلف قسطوں میں ادا کرنے ہونگے۔

جبکہ ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے یہ بھی واضح کردیا ہے کہ تیسر ٹاؤن اسکیم میں پہلے ہی پلاٹ حاصل کرنے والے اس قرعہ اندازی میں شامل ہونے کے اہل نہیں ہونگے۔ ایم ڈی اے نے تیسر ٹاؤن میں ماضی میں اوورسیز پاکستانیوں کو الاٹ کی گئی اراضی کے الاٹیز کو بھی خوشخبری سنائی ہے کہ انہیں بھی جلد ہی ان کے پلاٹوں کا قبضہ دے دیا جائے گا۔ مذکورہ پلاٹس پر عارضی بنیادوں پر افغان مہاجرین کو ٹھہرایا گیا تھا۔