مودی کی آمد پر کشمیر میں مکمل ہڑتال ،جنگ زدہ علاقے کا منظر

119
جموں: بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی آمد کے موقع پر شہر میں کرفیو کا سماں ہے
جموں: بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی آمد کے موقع پر شہر میں کرفیو کا سماں ہے

سری نگر(خبرایجنسیاں) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کے دورے پر مکمل ہڑتال ہوئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق موادی کی آمد سے قبل مقبوضہ وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل کردی گئی، جگہ جگہ بھاری نفری تعینات رہی‘ کٹھ پتلی انتظامیہ نے احتجاج کو روکنے کے لیے غیر اعلانیہ کرفیو نافذ کردیا‘ٹرین ، موبائل اور انٹرنیٹ سروس معطل رکھی گئی، گھروں باہر نکلنے والوں کو گرفتار کرلیا گیا، دستاویزات ہونے کے باجود موٹرسائیکلیں ضبط کرلی گئیں، مریضوں کو اسپتال جانے سے بھی روک دیا گیا،وادی جنگ زدہ علاقے کامنظر پیش کرتی رہی۔حریت قیادت کو گزشتہ روز ہی نظر بند کردیا گیا تھا۔بھارتی پولیس نے جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک کو گرفتار کرکے تھانہ کوٹھی باغ میں منتقل کردیا۔مودی کی آمد کو کشمیریوں نے مصیبت قرار دے دیا۔ کشمیری قیادت کا کہنا ہے کہ مودی حکومت کے 5 سال مقبوضہ کشمیر میں ظلم کے پہاڑ توڑے گئے ہیں۔کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی شاہ گیلانی نے اپنے بیان میں کشمیر کے حوالے سے پاکستانی کوششوں کوسراہا اور ساتھ ہی سفارتی محاذ پر مزید متحرک ہونے کی اپیل کی۔واضح رہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی کا دور حکومت رواں برس اختتام ہونے کو ہے اور کشمیر کے موجودہ دورے کو مشکلات میں گھری بے جی پی کی الیکشن تیاریاں قرار دیا جارہا ہے۔