گیس کے بدترین بحران نے عوام کیلیے مشکلات کھڑی کردی ہیں،عتیق الرحمن 

103

پشاور (آئی این پی) امیر جماعت اسلامی ضلع پشاور عتیق الرحمن نے کہا ہے کہ پشاور میں گیس کے بدترین بحران نے عوام کے لیے مشکلات کھڑی کردی ہیں، کئی کئی گھنٹوں تک گیس کی عدم دستیابی اور پریشر کم ہونے سے کھاناپکانا ممکن نہیں رہا،گھروں میں چولہے ٹھنڈے پڑے ہیں، سردی بڑھنے اور گیس بحران کی وجہ سے لکڑی اور مٹی کے تیل کی قیمت بھی غریب عوام کی پہنچ سے باہر ہوچکی ہے، حکومتی دعووں کے برعکس عوام کی پریشانی میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ وہ دفتر جماعت اسلامی نشترآباد میں مختلف وفود سے بات چیت کر رہے تھے ۔ عتیق الرحمن نے کہاکہ بجلی اور گیس کے بحران کی وجہ سے لوگوں کے روزمرہ کے معاملات درہم برہم اور زندگی اجیرن ہوچکی ہے۔یوں محسوس ہوتا ہے کہ جیسے حکمرانوں کوعوامی مسائل کے حل سے کوئی غرض نہیں۔حکومت بجلی وگیس کی لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے لیے محض دعووں اور باتوں کے بجائے سنجیدگی دکھائے اور عملی اقدامات کرے۔گیس کی کمیابی عوام الناس کے لیے اذیت کا باعث بن چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجلی وگیس کی لوڈشیڈنگ نے ملکی معیشت کوناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے۔ مزدوروں کے لیے روزگار کے مواقع ختم ہوکر رہ گئے۔ سرمایہ دار پاکستان میں نامساعد حالات کے پیش نظر سرمایہ کاری کرنے سے گریزاں ہیں۔ گیس کی بڑے پیمانے پرہونے والی چوری ختم اور بااثرشخصیات واداروں کی جانب سے اربوں روپے کے بلوں کی ادائیگی کردی جائے تو گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ میں بڑی حد تک کمی واقع ہوسکتی ہے ۔