حیدرآباد، ملونہ آسیہ کی رہائی کیخلاف مذہبی جماعتوں کو یوم سیاہ

31

حیدرآباد(نمائندہ جسارت)گستاخ رسول ملعونہ آسیہ کی رہائی کے خلاف حیدرآبادمیں جماعت اسلامی، جمعیت علما اسلام اورعالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کی جانب سے یوم احتجاج منایاگیا۔حیدرآبادپریس کلب پر ایک بڑااحتجاجی مظاہرہ کیاگیاجس کی قیادت امیرجماعت اسلامی وصدرمتحدہ مجلس عمل ضلع حیدرآبادحافظ طاہر مجید، عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے رہنما مولانا توصیف احمد،جمعیت علما اسلام ف کے ضلعی جنرل سیکرٹری حافظ خالدحسن دھامرہ اوراعظم جہانگیری کررہے تھے۔ حافظ طاہر مجید نے کہا کہ ملعونہ آسیہ کی رہائی برداشت ہے نہ تشددہماراراستہ ہے۔تحریک انصاف کی حکومت دوماہ میں بے نقاب ہوگئی ہے۔کہنے کوجمہوری دورہے لیکن پی ٹی آئی حکومت کاانداز حکمرانی مارشل لاسے بڑھ کر ہے ۔ان کامینڈیٹ جعلی ہے سارے کام بھی جعلی ہے نیب نے بدعنوانوں کی فہرست میں پی ٹی آئی کودکھایاہے یہ ہے ان کی کارکردگی۔ مولانا توصیف احمدنے کہاکہ تحفظ ختم نبوت ہرمسلمان کے ایمان کاحصہ ہے گستاخان نبی کی سزادینے کاحکم خود آپﷺ نے دیاہے ملک میں قانون توہین رسالت ریاست کومجبورکرتاہے کہ وہ گستاخان کیخلاف کارروائی کرے لیکن حکومت خودگستاخ رسول آسیہ ملعونہ سے ملی ہوئی ہے۔حافظ خالدحسن دھامرہ نے کہاکہ ناموس رسالت کے لیے ہم سروں پرکفن باندھ کرنکلے ہیں نبی کی ناموس ہمیں سب سے زیادہ عزیزہے چندلوگوں کاطعنہ دینے والے کراچی کاملین مارچ دیکھ لیں کہ کس طرح شمع رسالت کے پروان حرمت رسول ؐ پرمرمٹنے کوتیارہیں۔ اس موقع پراعظم جہانگیری نے خطاب کیااورجماعت اسلامی کے صوبائی رہنماعبدالوحیدقریشی بھی شریک تھے مظاہرین نے عدلیہ،حکومت اورملعونہ آسیہ کے خلاف بھرپورنعرے بازی کی ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ