وزارت داخلہ نے دھرنے کے دوران املاک کو نقصان پہنچانے والوں کی تصاویر جاری کردیں

173

وفاقی وزارت داخلہ نے آسیہ مسیح کی رہائی کے خلاف احتجاج اور دھرنے کے دوران املاک کو نقصان پہنچانے والے افراد کو گرفتار کرنے کے لیے ان کی تصاویر جاری کردی ہیں۔

وفاقی حکومت نے دھرنے کے دوران املاک کو نقصان پہنچانے والے شرپسند عناصر کے خلاف بھرپور کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے بھی ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ میں ملوث افراد کو گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے۔ اس سلسلے میں سیکڑوں افراد کے خلاف مقدمات بھی درج کرلیے گئے ہیں۔

شرپسندوں کی گرفتاری کیلئے ویڈیوز اور سی سی ٹی وی فوٹیجز کا جائزہ لیا جارہا ہے جبکہ ایف آئی اے کا سائبر ونگ اور پی ٹی اے بھی سوشل میڈیا پر شر انگیز مواد کا پتہ لگا رہا ہے۔ وزارت داخلہ کو اسپیشل برانچ اور دیگر ذرائع سے دھرنے کے دوران املاک کو نقصان پہنچانے والے افراد کی تصاویر موصول ہوگئی ہیں۔وزارت داخلہ نے تصاویر جاری کرتے ہوئے شہریوں سے کہا ہے کہ ان افراد کی شناخت کے لیے پولیس اور ایف آئی اے کی معاونت کریں۔

وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ شہریوں کی املاک کو نقصان پہنچانے والوں کی مزید تصاویر بھی جاری کی جائیں گی۔ وزارت داخلہ نے ایف آئی اے اور پولیس کو شرپسندوں کے خلاف کارروائی کے احکامات دے دیے ہیں۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے گزشتہ روز املاک اور عام افراد کو نشانہ بنانے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی ہدایت کی تھی۔لاہور میں سڑکیں بلاک کرنے اور ہنگامہ آرائی کے الزام میں تحریک لبیک کے رہنما افضل قادری اور خادم حسین رضوی سمیت 500 افراد کے خلاف 11 مقدمات درج کیے گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ