حدیدہ میں بڑا آپریشن شروع شدید جھڑپیں

109
صنعا: دیلمی ائربیس پر سعودی اتحاد کے حملے کا نشانہ بننے والی گاڑی تباہ ہوگئی ہے
صنعا: دیلمی ائربیس پر سعودی اتحاد کے حملے کا نشانہ بننے والی گاڑی تباہ ہوگئی ہے

صنعا (انٹرنیشنل ڈیسک) یمن کے ساحلی علاقے حدیدہ میں سرکاری فوج نے حوثی باغیوں کے خلاف ایک بڑے آپریشن کا آغاز کر دیا ہے۔ دوسری جانب مشرقی حدیدہ میں سرکاری فوج اور باغیوں کے درمیان خون ریز جھڑپوں کی اطلاعات ہیں۔ عرب ٹی وی کے مطابق مشرقی حدیدہ میں سرکاری فوج اور باغیوں کے درمیان ایک دوسرے پر درمیانے اور بھاری ہتھیاروں سے حملے کیے جا رہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق 16 کلومیٹر نامی علاقے میں پیش قدمی کے بعد العمالقہ بریگیڈ کے حملوں میں درجنوں حوثی باغی ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔ واضح رہے کہ سرکاری فوج نے جمعرات اور جمعہ کے روز حدیدہ صوبے کے مختلف مقامات پر حوثی باغیوں کے ٹھکانوں پر شدید بمباری کی، جس میں حدیدہ کے جنوبی داخلی راستوں پر قائم باغیوں کے مراکز کو خاص طور پر نشانہ بنایا گیا۔ دوسری جانب عرب اتحاد فورسز کے سرکاری ترجمان کرنل ترکی المالکی نے جمعہ کو علی الصبح ایک اعلان میں بتایا ہے کہ اتحادی فورسز نے صنعا میں الدیلمی ائر بیس میں عسکری اہداف کے خلاف کارروائی کی ہے ۔ سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق کارروائی کے دوران بیلسٹک میزائلوں کے گودام اور ان کے لانچنگ پیڈز، ڈرون طیاروں کے کنٹرول کے زمینی اسٹیشنز اور گولہ بارود کے استعمال کے ورکشاپس کو تباہ کر دیا گیا۔ مذکورہ کارروائی حوثی ملیشیا کی سرگرمیوں کی کڑی نگرانی کے بعد حاصل ہونے والی انٹیلی جنس اطلاعات کی بنیاد پر کی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ