حکومت نے تین ماہ میں قومی خزانے کو خالی کردیا، شبیر حسن انصاری

33

حیدرآباد (نمائندہ جسارت) مسلم لیگ ن کی سینٹرل ایگزیکٹیو کمیٹی کے ممبروسابق ایم این اے صاحبزادہ شبیر حسن انصار ی نے کہاہے کہ آج پاکستان 1971ء جیسی صورتحال کا شکا ر ہے ۔ تحریک انصاف کی حکومت نے عوام کو خوش حال بنانے کے بجائے ان کو مٹانے کے اقدامات شروع کر دیے ہیں ۔ آج ملک کی معاشی و اقتصادی صورتحال جس طرح سے زبوں حالی کا شکا ر ہے اس کی مثال پاکستان کی تاریخ میں نہیں ملتی۔ موجودہ حکومت نے تین ماہ کے اندر قومی خزانے کو خالی کردیا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے حیدرآباد کے مختلف علاقوں کے دورے کے دوران کارکنان اور علاقہ معززین سے ملاقات کے دوران کیا۔ شبیر انصاری نے کہا کہ 1971ء میں ایسی بد حالی والی صورتحال میں اسلامی برادری نے پاکستان کی بھرپور مدد کی تھی اور ملک اپنے پاؤں پر کھڑا ہو گیا تھا۔ لیکن آج صورتحال یہ ہے کہ کوئی بھی ملک ہمارے پاکستان کی مدد کر نے کو تیار نہیں ہے کیونکہ عمران خان کی نااہل حکومت نے دنیا کو یہ بتا دیا ہے کہ ان کے پاس پاکستان کے لیے مستقبل کا کوئی پلان نہیں ہے یہی وجہ ہے کہ CPECاور ملک کے بڑے بڑے تمام ترقیاتی منصوبے جنہیں میاں نواز شریف نے شروع کیاتھا آج وہ تمام منصوبے غیر یقینی کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شریف خاندان پر لگائے گئے تمام تر بے بنیاد الزامات کیوجہ سے نہ صرف پاکستان کی عوام بلکہ دنیاکے تمام ممالک میں بسنے والے پاکستان سے محبت کرنے والے مسلمانوں میں غم وغصے کی لہر پائی جاتی ہے کیونکہ وہ یہ جا نتے ہیں پاکستان کو میاں نوازشریف ہی ترقی کی منازل کی طرف لے کر جا سکتے ہیں ۔ اس وقت ہمارے ملک میں ترقی کا عمل مکمل طور پر رک چکا ہے مہنگائی نے ایک جانب غریب عوام کا جینا حرام کیا ہوا ہے تو دوسری طرف متوسط طبقے کی بھی چیخیں نکال دی ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت ملک کا مستقبل ایسے ہاتھوں میں ہے جو ملک کی عزت اور سا لمیت کے ساتھ کھیل رہے ہیں اور موجود ہ حکومت کی ناقص پالیسیاں عوام کے مسائل میں مزید اضافہ کا باعث بن رہی ہیں ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.