تاریخی تعلیمی ادارے کے معیار کو مزید بہتر بنایا جائے، عباس بلوچ

37

حیدر آباد (نمائندہ جسارت) ڈویژنل کمشنر حیدر آباد محمد عباس بلوچ کی زیر صدارت پبلک اسکول لطیف آباد حیدرآباد کے بورڈ آف گورنرز کا اہم اجلاس پبلک اسکول کے کانفرنس روم میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں بورڈ آف گورنرز نے فیصلہ کیا کہ کمشنر حیدرآباد بورڈ کے دیگر اراکین کا وفد وزیر اعلیٰ سندھ سے ملاقات کر کے انہیں پبلک اسکول کے مسائل سے آگاہ کریں گے تاکہ حیدرآباد کے اس تاریخی تعلیمی ادارے کے تعلیمی معیار کو مزید بہتر بنایا جائے اور انہیں اسکول کے مسائل کے حل کے لیے مالی معاونت کی درخواست کی جائے گی۔ اس موقع پر کمشنر حیدر آباد محمد عباس بلوچ نے کہا کہ تعلیم کی بہتری حکومت کی اولین ترجیح ہے اور اس ضمن میں کوشش کی جائے گی کہ طالب علم یہاں سے معیاری تعلیم حاصل کر کے ملک و قوم کا نام روشن کریں۔ اجلاس میں بورڈ آف گورنرز کی جانب سے مختلف کمیٹیاں تشکیل دینے کی منظوری دی گئی جو کہ پبلک اسکول لطیف آباد کو درپیش مالی مسائل کے حل کے لیے اپنی تجاویز، سفارشات اور انتظامی مسائل کے حل کے لیے متعلقہ حکام کو پیش کی جائیں گی۔ اجلاس میں مزید مشورہ دیا گیا کہ اسکول کے تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کے لیے نثار صدیقی جیسی نامور شخصیات سے تجاویز لی جائیں گی۔ اجلاس میں اسکول کے عملے کے مسائل پر بھی بات چیت کی جائے گی۔ اس موقع پر ڈی سی حیدرآباد محمد اسلم سومرو، سید رسول بخش شاہ، خاضی اسد عابد، پروفیسر اعجاز احمد قریشی، پروفیسر انجینئر مشتاق میرانی، میر فتح تالپور، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل اللہ بچایو سومرو، پبلک اسکول حیدرآباد کے پرنسپل فضل الدین میمن، ڈپٹی سیکرٹری محکمہ تعلیم احسان لغاری، ریجنل ڈائریکٹر سندھ ایجوکیشن فاؤنڈیشن حیدرآباد فیروز منصور، اسسٹنٹ کمشنر آفتاب بوزدار، اسسٹنٹ کمشنر تعلقہ لطیف آباد ڈاکٹر امبر اور خزانچی محمد عباس خواجہ نے اجلاس میں شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ