تنخواہوں سے محروم 54 ملازمین کا گھرانہ فاقوں کاشکارہوگیا‘سجن یونین 

36

کراچی (اسٹا ف رپورٹر)سندھ سولڈ ویسٹ میں بورڈ بلدیہ جنوبی کے 54ملازمین جنہیں ٹرانسفر کرنے کے باوجود دوماہ کی تنخواہوں کی ادائیگی سے محروم کردیا گیا ہے۔تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے باعث انکے گھروں میں فاقہ کشی شروع ہو گئی ہے فیسیں ادا نہ کرنے پر اسکولوں سے بچوں کو فارغ کیا جارہا ہے جبکہ کرایے کے مکانات میں رہنے والے ملازمین کو مالکان کی جانب سے بیدخلی کے نوٹس بھی جاری ہونا شروع ہوگئے ہیں اسی طرح فلیکسی لون لینے والے ملازمین پر ڈبل جرمانہ عائد کرنے کے باوجود انکو نادہندگی کے نوٹس جاری کیے جارہے ہیں سجن یونین کے صدر سید ذوالفقار شاہ ،جنرل سیکرٹری ملک نوازنے ایم ڈی
سولڈ ویسٹ اور چےئرمین واٹر کمیشن سے نوٹس لیکر فوری طور پر دو ماہ کی تنخواہوں کی ادائیگی کا مطالبہ کیا ہے۔کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کے ریٹائر اور وفات پاجانے والے2200سے زائد ملازمین اور انکے لواحقین دو سال سے اپنے قانونی واجبات کی ادائیگی سے محروم ہیں حکومت سندھ نے اگست 2016ء سے کے ایم سی کی 50کروڑ کی اسپیشل گرانٹ میں 20کروڑ روپے کی کٹوتی کرکے اسے مالی بحران کا شکار کردیا ہے ۔جبکہ بلدیاتی اداروں کی آکٹرائے ضلع ٹیکس کی مد میں ملنے والی گرانٹ میں صوبائی مالیاتی کمیشن کی2010ء کے بعد سے تشکیل نہ ہونے کے باعث اضافہ نہ ہونے سے مالی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ذوالفقارشاہ نے وزیراعلیٰ سندھ چیف سیکرٹری سندھ ،سیکرٹری فنانس اور سیکرٹری لوکل گورنمنٹ سے اپیل کی ہے کہ کے ایم سی وڈی ایم سیز کے2200سے زائد ریٹائر وفات پاجانے والے ملازمین کو قانونی واجبات کی ادائیگی کے لیے دوارب روپے کی اسپیشل گرانٹ جاری کی جائے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.