کینٹ اسٹیشن کے قریب ڈاکو کے شبہے میں تشدد کا نشانہ بننے والا شہری چل بسا

38

کراچی (اسٹاف رپورٹر)کینٹ اسٹیشن کے قریب دکانداروں نے شہری کو ڈاکو سمجھ کر تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد پولیس کے حوالے کیا جو زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا ، پولیس نے دکاندار اور اسکے دوست پولیس اہلکار کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کر دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق فیریئر کے علاقے کینٹ اسٹیشن کے قریب دکانداروں نے شہری کو ڈاکو قرار دے کر پکڑ کر تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد پولیس کو اطلاع کر دی، اطلاع ملتے ہی پولیس موقع پر پہنچی اور تشدد کا نشانہ بننے والے شخص کو فوری طور پر قریبی اسپتال پہنچایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا ۔پولیس کے مطابق اسپتال میں مقتول کی شناخت غلام سرور ولد حسین بخش کے نام سے ہوئی ، ان کا کہنا ہے کہ مقتول رحیم یار خان کا رہائشی ہے اور کینٹ اسٹیشن کے قریب مارکیٹ سے کئی ماہ سے موبائل فون خرید کر لے کر جارہا تھا ،پولیس کا کہنا ہے کہ مقتول ہفتے کے روز بھی کینٹ اسٹیشن کے پاس موبائل مارکیٹ آیا تو وہاں پر دکاندار رانا اسلم نے اسکو پکڑ کر اپنے دوست عذیر کے ساتھ مل کر تشدد کا نشانہ بنایا اور ڈکیت ظاہر کرکے پولیس کے حوالے کیا ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ مقتول ،دکاندر رانا اسلم سے موبائل فون لے کر گیا تھا اور وہ جب ہفتے کوآیا تو دکاندار نے اسکو پکڑ کر اپنی رقم کا تقاضا کیا تو ان کے درمیان جھگڑا ہوگیا ، پولیس نے دکاندار رانا اسلم اور اسکے دوست عذیر کو حراست میں لے لیا ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دکاندار رانا اسلم کا دوست عذیر سی ٹی ڈی کا اہلکار ہے ، حراست میں لیے جانے والے پولیس اہلکار اور دکاندار سے تفتیش کی جارہی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.