وکلا گردی:10سال میں 117مقدمات،کوئی گرفتاری ہوئی نہ سزا

57

لاہور (آن لائن) عدالت عظمیٰ کے روبرو آئی جی پنجاب نے پولیس تشدد کے واقعات کی رپورٹ پیش کردی۔ رپورٹ کے مطابق گزشتہ 10سال میں وکلا گردی کے 117 مقدمات درج ہوئے، کسی بھی وکیل کو نہ سزا ہوئی اور نہ ہی ان کو گرفتار کیا گیا۔چیف جسٹس کے روبرو وکلاکی جانب سے سب انسپکٹر پر تشدد کے از خود نوٹس کی سماعت کے دوران آئی جی پنجاب نے رپورٹ عدالت میں پیش کی۔ چیف جسٹس نے آئی جی پنجاب کو وکلا کے پولیس پر تشدد کے واقعات کی تفصیلات طلب کررکھی تھیں۔ رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سٹی ڈویژن میں وکلا کے خلاف 80 مقدمات درج ہوئے، لاہور کینٹ ڈویژن میں 11 ماڈل ٹاؤن میں 14 اور سول لائن میں میں 12 مقدمات درج ہوئے، تاہم ان تمام مقدمات میں نہ تو کسی وکیل کو گرفتار کیا جا سکا اور نہ کسی کو سزا دی جا سکی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.