اشتعال انگیز تقریرکے 21مقدمات یکجا،23اکتوبر کو فرد جرم عاید ہوگی

54

کراچی (اسٹاف رپورٹر)انسداد دہشت گردی کی عدالت میں ایم کیوایم کے بانی کی اشتعال انگیز تقریر کے 26مقدمات کی سماعت ، 21 مقدمات یکجا کرنے کی ملزمان کی درخواست منظور، درخواست گزار کا کہنا تھا کہ الزام اور وقوع ایک ،صرف مدعی مقدمات الگ ہیں،عدالت نے درخواست منظور کرتے ہوئے سماعت 23اکتوبر تک ملتوی کردی۔آئندہ سماعت پر فاروق ستار ، عامر خان وسیم اختر و دیگر کی عبوری ضمانت پر فیصلہ سنایا جائے گا۔دوسری جانب انسداد دہشت گردی عدالت میں ایم کیوایم کے خلاف میڈیا ہاوسز حملے سے متعلق مقدمات کی سماعت ہوئی ،ملزمان ندیم اور سبحان تاخیر سے پیش ہوئے ،عدالت نے استفسار کیا کہ تیسرا ملزم کہاں ہے جس پر وکیل صفائی نے کہاکہ ملزم مہدی کے کی خالہ کا انتقال کا ہوگیا ہے اندرون سندھ گیا ہے ، عدالت نے ملزم مہدی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتار جاری کرتے ہوئے سماعت 23اکتوبر تک ملتوی کردی،آئندہ سماعت پر ملزمان پر فرد جرم عاید کی جائے گی۔ سماعت کے بعد صحافیوں سے بات کرتے ہوئے فاروق ستار کا کہنا تھا کہ ہماری خواہش ہے کہ جلد فرد جرم عاید ہو اور مقدمہ منطقی انجام کوپہنچے،23 اگست کو لندن سے باضابطہ قطع تعلقی کے اعلان کے بعد یہ بات واضح ہے کہ 22 اگست کے واقعے میں کون ملوث تھا ۔ انہوں نے 12اکتوبر کی پریس کانفرنس کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ ایم کیو ایم پاکستان کو بچانے کا ہے ،ہم الیکشن میں ہارے بھی ہیں اور ہرایا بھی گیا ہے۔اب انٹرا پارٹی الیکشن میں بات ہوگی ، رابطہ کمیٹی کا رکن ہونا نہ ہونا برابر ہے،میں نے رکنیت سے استغفا 12 ستمبر کو دیا تھا ، میں نے فیصل سبزواری سمیت دیگر لوگوں کی سیاسی تربیت کی،ایم کیو ایم کو 1986ء والی پڑھی لکھی جماعت بناؤں گا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.