فاروق ستار نے ایم کیوایم نظریاتی گروپ قائم کرنے کا اعلان کردیا

115

کراچی(اسٹاف رپورٹر) متحدہ قومی موومنٹ کے سینئر رہنما ڈاکٹر فاروق ستارنے ایم کیوایم پاکستان نظریاتی گروپ قائم کرنے کا اعلان کر دیا۔ انہوں نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم جس تباہی کے کنارے پر پہنچ گئی ہے‘ اس کا تقاضا ہے کہ فوری طور پر پارٹی کو 5 فروری کی پوزیشن پر واپس لایا جائے‘ جلد انٹرا پارٹی الیکشن کرایا جائے اور جنوبی سندھ صوبہ کے لیے بھرپور طریقے سے تحریک کا آغاز کیا جائے‘ مجھے صرف ایک فرد واحد نے نقصان پہنچایا ہے‘ ایم کیو ایم پاکستان نے اپنا قبلہ درست نہیں کیا تو بلدیاتی انتخابات میں اس سے بدتر حال ہوگا‘ اب میں ایک ایک مہاجر اور کارکنوں کے پاس جاؤں گا اور ایم کیو ایم نظریاتی گروپ کے قیام کے لیے کام کروں گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعے کو کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے 23 اگست کو پارٹی کی سربراہی لندن سے اپنے ہاتھ میں لے لی‘ ووٹر ز اور عوام اس تاریخی حقیقت کو اچھی طرح سے جاتنے ہیں لیکن 11 فروری کے بعد خالد مقبول صدیقی اور ان کے ساتھیوں نے مجھ سے پارٹی کی سربراہی لے لی‘ انہوں نے کارکنوں سے مینڈیٹ نہیں لیا ضرورت اس بات کی ہے کہ کارکنوں سے نیا مینڈیٹ لیا جائے‘ مجھے یہ بات اچھی طر ح سے معلوم تھی کہ الیکشن 2018ء ایم کیو ایم کا نہیں ہے اور نہ ہی میرا ہے‘ مجھے اس الیکشن میں ہروایا جائے گا‘ مجھے پارٹی اور رابطہ کمیٹی کی جانب سے مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا جو بھی فیصلے کیے گئے مجھ سے مشورہ نہیں لیا گیا‘ اس لیے میں نے فیصلہ کیا ہے کہ میرے مطالبات پر غور نہیں کیا گیا تو میں ایم کیو ایم نظریاتی گروپ کے قیام کے لیے اب کام کروں گا اور ایک ایک مہاجر اور ایک ایک کارکن کے پاس جاؤں گا۔ انہوں نے کہا کہ نئی حکومت کے ساتھ ملک میں مہنگائی کا طوفان آگیا ہے وہ وقت دور نہیں جب ڈالر200 روپے کا ہوجائے گا اور اس پر ایم کیو ایم خاموش ہے‘ وفاقی وزرا معیشت کے ساتھ کھلواڑ کر رہے ہیں‘ ملک کے حالات خراب ہیں‘ وزیر اعظم عمران خان کو چاہیے کہ وہ وزرا کو غیر ذمے دارانہ بیانات سے روکیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ